بیرونی سازش کے ثبوت نہیں ملے، این ایس سی اعلامیہ

اسلام آباد:قومی سلامتی کمیٹی نے کہاہے کہ ٹیلی گرام میں کسی سازش کے ثبوت نہیں ملے ۔سکیورٹی ایجنسیز نے بھی قومی سلامتی کمیٹی کو سازش کے ثبوت نہ ملنے سے آگاہ کر دیا ۔ سکیورٹی ایجنسیز کی معلومات کے مطابق کوئی بیرونی سازش نہیں ہوئی۔

وزیر اعظم شہباز شریف کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں وزیر دفاع خواجہ آصف ، وزیر مملکت برائے امور خارجہ حنا ربانی کھر ،وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ اور وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب ، تینوں مسلح افواج کے سربراہان اور چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی سمیت اعلیٰ سویلین اور فوجی افسران نے شر کت کی ۔

قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق امریکا میں پاکستان کے سابق سفیر اسد مجید خان کی شرکاء اجلاس کو بریفنگ دی ۔ اسد مجید نے اجلاس کو ٹیلی گرام کے مواد اور پس منظر پر بریف کیا ۔ ٹیلی گرام میں کسی سازش کے ثبوت نہیں ملے۔

اعلامیہ میں کہا گیا کہ امریکا میں پاکستان کےسابق سفیر اسد مجید نے قومی سلامتی کمیٹی کو بریفنگ دی اور بتایا کہ واشنگٹن میں پاکستانی سفارتخانے کو ٹیلی گرام موصول ہوا۔ کمیٹی نے اس ٹیلی گرام پر تبادلہ خیال کیا۔سیکیورٹی ایجنسیز نے قومی سلامتی کمیٹی کو سازش کے ثبوت نہ ملنے سے آگاہ کر دیا۔گزشتہ قومی سلامتی کمیٹی اجلاس کے منٹس کی توثیق کی گئی

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More