پاک، روس اسٹریم گیس پائپ لائن منصوبے پر مذاکرات مکمل

اسلام آباد: پاکستان اور روس کے درمیان پاک اسٹریم گیس پائپ لائن منصوبے پر ہونے والے مشترکہ ٹیکنیکل کمیٹی کے مذاکرات کامیابی کے ساتھ اختتام پزیر ہو گئے۔ دونوں ملکوں نے آئندہ ماہ نومبر میں منصوبے کے شیئر ہولڈرز معاہدے کو حتمی شکل دینے کے عزم کا بھی اظہار کیا۔

پاک ا سٹریم گیس پائپ لائن پاکستان اور روس کے درمیان چار روزہ مذاکرات اسلام آباد میں ہوئے ۔ مذاکراے کے بعد جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ اجلاس میں پاکستان اسٹریم گیس پائپ لائن منصوبے کے شئیرہولڈر معاہدے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

مذاکرات میں پاکستان کے نمائندگی سیکرٹری پیٹرولیم ڈاکٹر ارشد محمود نے کی جس میں اٹارنی جنرل سمیت خارجہ خزانہ اور قانون کی وزارتوں کے نمائندوں سمیت اوگرا اور ایس ای سی پی کے نمائندے بھی شریک ہوئے جبکہ روسی وفد کی قیادت روسی نامزد کمپنی کے سی ای او نے کی روسی وفد نے بنکوں کی قیادت میں مالیاتی مشیروں سے بھی رابطہ اور مشاورت کروائی ۔

اعلامیے کے مطابق اجلاس میں فریقین کا شیئر ہولڈرز معاہدے کے مسودے پر بات چیت کا سلسلہ جاری رکھنے پر اتفاق کیا ۔ مذاکرات کا آئندہ دور 8 نومبر سے اسلام آباد میں شروع ہو گا۔پاک اسٹریم گیس پائپ لائن پاک روس تعلقات میں ایک فلیگ شپ منصوبہ ہے۔ پاک سٹریم گیس پائپ لائن منصوبے کے تحت کراچی سے قصور تک گیس پائپ لائن تعمیر ہونی ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More