ناظم جوکھیو قتل کیس کی تحقیقات مکمل نہ ہوسکیں

کراچی: ناظم جوکھیو قتل کیس کی تحقیقات مکمل نہ ہوسکیں، تفتیشی افسر نے حتمی چالان جمع کروانے کے ایک بار پھر مہلت طلب کرلی جس پر عدالت نے شدید برہمی کا اظہار کیا۔ ناظم جوکھیو کی بیوہ کا کہنا ہے کہ وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ انصاف دلوانے کے اپنے وعدے کو بھول گئے جام عبدالکریم اگر بے گناہ ہیں تو عدالت کا سامنا کیوں نہیں کرتے۔

جوڈیشل میجسٹریٹ ملیر کی عدالت میں ناظم جوکھیو قتل کیس کی سماعت کے دوران مقدمہ کا حتمی چالان پیش نہیں کیا جاسکا تفتیشی افسر کا کہنا تھا کہ ڈی وی آر،یو ایس بی سمیت دیگر رپورٹس آنا باقی ہیں جس کے بعد حتمی چالان جمع کروایا جاسکے گا۔ تفتیشی افسر پر عدالت نے سخت برہمی کا اظہار کیا اور دس دن کی آخری مہلت دیتے ہوئے آئندہ سماعت 10 جنوری تک کے لئیے ملتوی ۔

ناظم جوکھیو کی بیوہ نے کہا کہ مراد علی شاہ کی جانب سے انصاف دلانے کی یقین دھانی کروائی گئی تھی ایم این اے جام عبدالکریم ان سے ڈیل کرنا چاہتا ہے۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر ملزمان کو دوبارہ پیش کرنے کی ہدایت کردی۔ جیل حکام کی جانب سے سماعت کے موقع پر ایم پی اے جام اویس سمیت چھ ملزمان کو پیش کیا گیا تھا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More