ناظم جوکھیو قتل کیس:جام اویس سمیت تین ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع

کراچی: ملیر کورٹ نے ملیر میمن گوٹھ میں غیر ملکیوں کو شکار سے روکنے پر نوجوان ناظم جوکھیو کے قتل کے مقدمے میں رکن اسمبلی جام اویس سمیت تین ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں تین یوم کی توسیع کردی۔

ملیر کورٹ میں ملیر میمن گوٹھ میں غیر ملکیوں کو شکار سے روکنے پر نوجوان ناظم جوکھیو کے قتل سے متعلق سماعت ہوئی۔ پولیس نے ممبر صوبائی اسمبلی جام اویس کو عدالت میں پیش کردیا۔ ممبر صوبائی اسمبلی جام اویس اور دیگر ملزمان کو انتہائی سخت سیکیورٹی میں عدالت پہنچایا گیا۔ تفتیشی افسر نے بتایا کہ مقدمے میں دو ملزمان مفرور ہیں۔ ملزمان سے مفرور ملزمان سے متعلق تفتیش کرنی ہے۔ عدالت نے رکن اسمبلی جام اویس سمیت تین ملزمان کے جسمانی ریمانڈ میں تین یوم کی توسیع کردی۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر پیشرفت رپورٹ طلب کرلی۔

مقتول ناظم جوکھیو نے ملیر میمن گوٹھ میں غیر ملکیوں کو شکار سے روکنے کی وڈیو سوشل میڈیا پر اپلوڈ کی تھی۔ مقتول ناظم کی تشدد زدہ لاش ملیر میمن گوٹھ سے ملی۔ مقتول کے ورثا نے قتل کے لئے ممبر صوبائی اسمبلی جام اویس گہرام کو مقدمے میں نامزد کیا تھا۔ پی پی ممبر سندھ اسمبلی کی پیشی کے موقع پر ملیر کورٹ میں وکلا نے احتجاج کیا اور وکلا کی ممبر صوبائی اسمبلی کے خلاف نعرے بازی کی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More