ہم کراچی کی نہیں پورے سندھ کے حقوق کی بات کرتے ہیں،مصطفی کمال

کراچی: پاک سرزمین پارٹی کے چئیرمین مصطفی کمال نے کہا ہے کہ ہم کراچی کی نہیں پورے سندھ کے حقوق کی بات کرتے ہیں،پیپلز پارٹی نے مطالبات حل کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

صوبائی وزیر ناصر شاہ نے کہا کہ پیپلز پارٹی تفریق اور لسانیت کی سیاست پر یقین نہیں رکھتی ہم نے اپنے طور پر بلدیاتی قانون کو بہتر کرنے کی کوشش کی،ہم بلدیاتی انتخابات کے لیے مکمل طور پر تیار ہیں ۔

سندھ حکومت بلدیاتی قانون پر اتفاق رائے پیدا کرنے کیلیے متحرک ہوگئی اور اپوزیشن جماعتوں سے رابطے شروع کردیے ۔وزیربلدیات ناصر شاہ کی قیادت میں پیپلزپارٹی کاوفد پی ایس پی کےمرکزپاکستان ہاؤس پہنچے ۔پی ایس پی نے بلدیاتی قانون پر تحفظات سے آگاہ کیا۔

میڈیا سے گفتگو میں مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ آج لسانیت پر جمع ہونے کی وجوہات چالیس سال قبل جمع ہونے کی وجوہات سے زیادہ ہیں، پیپلز پارٹی نے مطالبات حل کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

مصطفی کمال کا کہنا تھا کہ ٹنڈوالہ یار واقعہ پر پولیس نے ہینڈلنگ صحیح نہیں کی ہے،اس واقعہ کے بعد بہت سارے لوگوں کو موقع مل رہا ہے کہ لسانیت کی بنیاد پر اپنی سیاست چمکائیں،پیپلز پارٹی کو ٹنڈوالہ یار کے واقع کو سنجیدگی سے دیکھنا ہوگا۔

اس موقع پر صوبائی وزیر بلدیات ناصر شاہ کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی لسانیت کی سیاست پر یقین نہیں رکھتی،اپنے طور پر بلدیاتی قانون کو بہتر کرنے کی کوشش کی،ہم نے صوبے کے حالات کو کنٹرول میں کرنا ہے، اسی لیے جماعت اسلامی سے بھی ملاقات کی اور پی ایس پی کے پاس بھی آئے ہیں۔

ملاقات کے دوران ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضی وہاب اور پی ایس پی کے صدر انیس قائم خانی،ارشد وہرہ اور دیگر موجود تھے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More