مصطفیٰ کمال اور حافظ نعیم کی ملاقات، بلدیاتی بل کیخلاف مشترکہ لائحہ عمل پر اتفاق

کراچی: جماعت اسلامی اور پاک سرزمین پارٹی نے بھی سندھ حکومت کے منظورکردہ بلدیاتی بل کو مستردکردیا۔امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم کہتے ہیں پیپلزپارٹی کی لسانی سیاست کوقبول نہیں کیاجاسکتا جبکہ مصطفیٰ کمال نے کہا کہ ہم لوکل گورنمنٹ کےاختیارات کی واپسی چاہتےہیں۔

سندھ حکومت کےبلدیاتی بل کیخلاف اپوزیشن جماعتیں متحد ہو گئی۔ چیئرمین پی ایس پی مصطفیٰ کمال وفدکےہمراہ ادارہ نور الحق پہنچیں جہاں انہوں نے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم سے ملاقات کی جس میں سندھ کے بلدیاتی بل پر گفتگو کی گئی ۔

میڈیاسےگفتگومیں مصطفی کمال بولے دونوں جماعتوں نئے قانون کیخلاف ایک پیج پر ہیں۔ہم لوکل گورنمنٹ کےاختیارات کی واپسی چاہتےہیں۔ملک میں اختیارات کونچلی سطح پرمنتقل نہیں کیاجارہا ہے۔پیپلزپارٹی سندھ میں بھی بلوچستان جیسےحالات پیداکررہی ہے۔

امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم نے کہا کہ پیپلز پارٹی سندھ کے شہریوں کا استحصال کررہی ہے۔ لوکل گورنمنٹ کےمعاملات طےشدہ ہونےچاہیں۔دونوں جماعتوں نے بلدیاتی بل مسترد کرتے ہوئے مشترکہ لائحہ عمل لانے پر اتفاق کرلیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More