عمران خان چاہتے ہیں کہ عدالتیں ان کی مرضی کا فیصلہ دیں، مصدق ملک

وزیر مملکت پیٹرولیم مصدق ملک نے کہا ہے کہ پاکستانی ایٹمی پروگرام کا مخالف شخص پی ٹی آئی کا مقدمہ لڑے گا۔عمران خان آج قوم کو بتائیں نو نیوکلیئر پروگرام کہنے والا لابنگ کے لیے کیوں ہائر کیا ہے۔عمران خان چاہتے ہیں عدالتیں مولوی تمیز الدین اور ذوالفقار علی بھٹو کیس جیسے فیصلے دیں۔

وزیر مملکت برائے پیٹرولیم مصدق ملک نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں احتساب کا نظام سب کے لیے برابر ہونا چاہیے جبکہ کمزور اور طاقتور کے لیے ایک نظام ہو۔ ایسا نظام نہ ہو کہ مریم نواز کو 45 دن کا ریمانڈ دیا جائے لیکن غداری کے ملزم اور اداروں پر تنقید کرنے والے کا صرف 2 دن کا ریمانڈ دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی 75ویں سالگرہ پر ایسے لوگ چاہیئں جنہیں یقین ہو پاکستان آزاد ملک ہے اور پاکستان کو تابناک منزل کی جانب لے کر جانا ہے۔ پاکستان میں طاقتور اور کمزور برابر کرنے کی کوششوں کی ضرورت ہے۔مصدق ملک نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے امریکہ میں فینٹن گروپ کو ہائر کیا گیا ہے اور اس کا مالک کون ہے ؟ جو پاکستان میں پی ٹی آئی کا مقدمہ لڑے گا۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو بیٹے سے تنخواہ نہ لینے پر ہٹانے کی سزا دی گئی لیکن ایک لیڈر نے ملک ریاض سے ساڑھے400 کینال زمین لی اور فائدہ پہنچایا۔ شاہد خاقان کا 90 دن کا ریمانڈ دیا گیا لیکن عمران خان سے حساب نہیں مانگا جاسکتا۔ عمران خان چاہتے ہیں ان سے فارن فنڈنگ سےمتعلق پوچھا بھی نہ جائے۔وزیر مملکت نے کہا کہ مریم نواز کو تحقیقات کے مرحلے پر گرفتار کیا گیا لیکن عمران خان تو عدالتوں میں جا رہے ہیں کہ تحقیقات نہ کریں۔ عمران خان آج قوم کو بتائیں نو نیوکلیئر پروگرام کہنے والا لابنگ کے لیے کیوں ہائر کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان چاہتے ہیں عدالتیں مولوی تمیز الدین اور ذوالفقار علی بھٹو کیس جیسے فیصلے دیں۔ وہ سیاسی دباؤ کے ذریعے پی سی او نظام لانا چاہتے ہیں۔ عمران خان نے جس افسر کو آئی جی بلوچستان لگایا آج اس پر عدم اعتماد کر رہے ہیں اور انہوں نے مانا کہ عارف نقوی سے پیسے لیے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More