رینجرز اہلکاروں کا قتل، عدالت نے عذیر بلوچ اور شیرو کو رہا کردیا

کراچی: انسداد دہشتگردی عدالت نے لیاری گینگ کے سرغنہ عذیر بلوچ اور شیر محمد عرف شیرو کو رینجرز اہلکاروں کے قتل کے کیس میں با عزت رہا کردیا ۔ رینجرز اہلکاروں کو 2013 میں اغوا کے بعد قتل کردیا گیا تھا ۔

کراچی کی انسداد دہشتگردی عدالت میں رینجرز اہلکاروں کے اغوا اور قتل کے مقدمہ کا فیصلہ سنا دیا گیا۔عدالت نے عدم ثبوت اور شک کا فائدہ دیتے ہوئے عزیر بلوچ اور شیر محمد عرف شیرو کا بری کردیا۔پولیس کے جانب سے درج مقدمہ کےمطابق دو رینجرز اہلکاراعجاز اور ناصر کو مارچ 2013 میں اغوا کیا گیا تھا۔

ملزمان نے رینجرز اہلکاروں کو قتل کرنے کے بعد مقتولین کی مسخ شدہ لاشیں میوہ شاہ قبرستان میں پھینک دی تھی۔ ملزموں کے خلاف تھانہ پاک کالونی میں دوہرے قتل کا مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More