صحافی کا قتل، مریم ،بلاول اور حمزہ شہباز سمیت سیاسی رہنماؤں کی مذمت

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سمیت سیاسی حلقوں اور صحافی برادری نے لاہور میں پریس کلب کے باہر صحافی کے قتل کی شدید مذمت کی ہے ۔صحافی تنظیموں نے حکومت سے ملزموں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے ۔

پریس کلب لاہور کے سامنے دن دیہاڑے صحافی کے قتل نے پولیس کے امن وامان کے دعووں کی قلعی کھول دی ۔سیاسی شخصیات اور صحافی تنظیموں کی جانب سے واقعے کی شدید مذمت کی گئی ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے مقتول کے لواحقین کوانصاف فراہمی کی یقین دہانی کراتےہوئے ملزموں کی گرفتاری کے احکامات جاری کر دئیے ہیں ۔

اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز کا کہنا ہے کہ دن دیہاڑے صحافی کی ٹارگٹ کلنگ بدامنی کی لہر کا تسلسل ہے۔پنجاب میں امن و امان کی صورتحال مسلسل بگڑ رہی ہے۔نا اہل حکومت کے دور میں ملک عدم تحفظ کا شکار ہو چکاہے۔

مسلم لیگ نون کی نائب صدر مریم نواز نے کہا کہ دن دہاڑے صحافی حسنین شاہ کے بہیمانہ قتل کی خبر سن کر بہت دکھ ہوا۔ حکومت نام کی کوئی چیز ہوتی تو اس سے سوال بھی کرتے کے ایسا کیوں ہوا۔ اللہ مرحوم کے درجات بلند فرمائے اور ان کے اہلخانہ کو صبر جمیل عطا فرمائے ۔

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نےواقعے پر اظہارافسوس کرتے ہوئے کہا ہے کہ لاہور پریس کلب کے سامنے دن دیہاڑے صحافی کا قتل تشویش ناک ہے۔میڈیاسے وابستہ افراد پہلے ہی عدم تحفظ کے احساس سے دوچار ہیں۔پنجاب حکومت واقعے کی انکوائری کرکے مجرموں کو کیفرکردار تک پہنچائے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More