ایم کیو ایم کے وفد کی چیف الیکشن کمشنر سے ملاقات

اسلام آباد: ایم کیو ایم کے وفد کی چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ سے ملاقات ہوئی۔ ایم کیو ایم کے کنوینئر خالد مقبول صدیقی کہتے ہیں ایم کیو ایم ملک میں تبدیلی کی سب سے بڑی علامت ہے ہمارا راستہ گورنر سے نہیں ہے ہماری سیاسی آزادیاں رکی ہوئی ہیں۔ فروغ نسیم کہتے ہیں حلقہ بندیوں ، ووٹوں کی تبدیلی اور مردم شماری پر الیکشن کمیشن نے ہمارے تمام تحفظات سنے اور ہمیں ایک پٹیشن دائر کرنے کا کہا ہے۔

ایم کیو ایم کے کنوینئر خالد مقبول صدیقی، فروغ نسیم اور امین الحق پر مشتمل وفد نے چیف الیکشن کمشنر سکندر الطنا راجہ سے ملاقات کی۔ ملاقات کے بعد الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ سندھ میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات اصل میں انتخابات نہیں تھے، ہمیں پاکستان، آئین و قانون کا اتحادی ہونا چاہیے، اپنے تحفظات سے وزیر اعظم کو آگاہ کردیا ہے۔

میڈیا سے گفتگو میں ایم کیو ایم رہنما فروغ نسیم کا کہنا تھا کہ ہمارے تحفظات پر الیکشن کمیشن نے ہمیں پٹیشن دائر کرنے کا کہا ہے۔ پٹیشن پر الیکشن کمیشن سندھ حکومت سمیت تمام فریقین کو سنے گا۔ خالد مقبول صدیقی کا مزید کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کا راستہ گورنر سے نہیں ۔ ہماری سیاسی آزادیاں بھی رکی ہوئی ہیں، ایم کیو ایم ملک میں تبدیلی کی سب سے بڑی علامت ہے

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More