اسرائیل میں مس یونیورس کا مقابلہ، جنوبی افریقہ کی حکومت اہم اعلان

کیپ ٹاؤن: جنوبی افریقہ کی حکومت نے اسرائیل میں ہونے والے مس یونیورس کے مقابلے میں شرکت کرنے کے منتظمین کے فیصلے سے خود کو الگ کر لیا ہے۔

غیرملکی خبرایجنسی کے مطابق جنوبی افریقہ کی حکومت نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ مس جنوبی افریقہ کے مقابلے کا اہتمام کرنے والے ادارے نے اسرائیل میں ہونے والے مس یونیورس کے مقابلے میں شرکت کا جو فیصلہ کیا ہے اس سے حکومت کا کچھ بھی لینا دینا نہیں ہے۔ حکومتی بیان میں کہا گیا فلسطینیوں کے خلاف اسرائیلی مظالم کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔

مس یونیورس کا سالانہ مقابلہ اسرائیل کے شہر ایلات میں 12 دسمبر کو ہونے والا ہے۔ جنوبی افریقہ میں بہت شدت کے ساتھ یہ مطالبہ ہو رہا تھا کہ اسرائیل میں ہونے کی وجہ سے مس جنوبی افریقہ لالیلا ایم سوانے کو اس مقابلے کا بائیکاٹ کرنا چاہیےجس کے بعد حکومت نے اپنے فیصلے کا اعلان کیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More