یاسین ملک کی سزا کا معاملہ عالمی فورمز پر لے جانے کا اعلان

اسلام آباد: کشمیری حریت پسند رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشال ملک فاشسٹ مودی سرکار پر تنقید ،یاسین ملک کی سزا کے بھارتی عدالت کے فیصلہ کو مسترد کرتے ہوئے معاملہ عالمی فورمز پر لے جانے کا اعلان ۔ کہتی ہیں موجودہ دور کے ہٹلر کی عدالت سے یاسین ملک کی زندگی کی بھیک نہیں مانگوں گی۔ یہ دنیا کا واحد مقدمہ تھا جس کے دوران ملزم کو بولنے نہیں دیا گیا اور فیصلہ سنانے سے قبل ہی میڈیا کے ذریعے عمر قید کا عندیہ دیدیا گیا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مشال ملک کا کہنا تھا کہ کل بھارت کا عدالتی نظام انصاف زمین بوس ہوگیا۔ یاسین ملک جیسا بہادر صدیوں میں نہیں دیکھا۔ وہ اکیلا نہیں ہے کشمیر کا ہر بچہ یاسین ملک ہے۔ اہلیہ یاسین ملک نے عالمی برادری سے سوال کیا کہ کشمیریوں کے لیئے کیوں انٹرنشینل کرائم ٹربیونل کیوں نہیں تشکیل دیا جارہا؟

مشال ملک کے مطابق بھارت میں مسلمان وکلا کو ٹارگٹ کرکے شہید کیا جاتا ہے۔ کشمیریوں کی تحریک آزادی کو دہشت گردی کے ساتھ جوڑا جارہا ہے جبکہ ہماری تحریک سیاسی ہے لیکن اب آزادی کی جنگ نہیں رکے گی۔ اس نوعیت کی جدوجہد ہمارا حق ہے میں اور میری بیٹی بھی کشمیر کی آزادی پر قربان ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More