کشمیری پرامن جدوجہد آزادی پر یقین رکھتے ہیں،مشعال ملک

اسلام آباد: حریت پسند کشمیری رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک کہتی ہیں کنٹرولڈ بھارتی عدلیہ حریت پسند کشمیری رہنماؤں کے عدالتی قتل کی ذمہ دار ہے۔ پرامن تحریک آزادی کشمیر کے رہنما یاسین ملک کو نیلسن منڈیلا کی طرح دہشت گرد قرار دیا گیا ہم گاندھی اور نیلسن منڈیلا کے نظریات پر گامزن ہیں۔

اسلام آباد بار ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن کے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کشمیری حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک کا کہنا تھا کہ یاسین ملک کو بھارت میں عدالتی کاروائی کے دوران بولنے کی اجازت نہ دیتے ہوئے آن لائن سزا سنائی گئی۔ یاسین ملک جب بولنے لگے تو انہیں میوٹ کردیا گیا۔ بھارتی عدلیہ کسی بھی کشمیری کو مبنی بر انصاف اس کے حقوق کا تحفظ فراہم کرنے میں بری طرح ناکام نظر آتی ہے۔

یاسین ملک کی اہلیہ کہتی ہیں کہ کشمیری پرامن جدوجہد آزادی پر یقین رکھتے ہیں ہم گاندھی اور نیلسن منڈیلا کے نظریات پر گامزن ہیں مگر بھارتی کنٹرولڈ عدلیہ ہمارا جوڈیشل قتل کررہی ہے، سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے دیگر مقررین نے عالمی برادری سے یاسین ملک کی غیر قانونی سزا کیخلاف نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More