آئی ایم ایف سے معاہدہ جلد ہوجائے گا،مفتاح اسماعیل

اسلام آباد: وفاقی وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے کہ مجھے تبدیل کرنا وزیراعظم کا استحقاق ہے، آئی ایم ایف سے معاہدہ جلد ہوجائے گا، عالمی سطح پر تیل کی قیمتیں کم ہوں گی تو ہم بھی قیمتیں کم کردیں گے۔

ٹونائٹ ود فریحہ میں گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ آج بھی وزیراعظم نے کہا تیل کی قیمتیں کم کرنے کا حل تلاش کریں، مجھے احساس ہے کہ مڈل کلاس پر بوجھ بڑھ رہا ہے، حکومت لینے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ جب حکومت بنی تو ایک تجویز یہ تھی کہ حکومت چلانے کی بجائے الیکشن کی طرف جایا جائے لیکن شہبازشریف نے حکومت چیلنج سمجھ کر قبول کی، ہم نے شہبازشریف کو بتایا تھا کہ ملک دیوالیہ ہونے کی طرف جارہا ہے تو شہبازشریف نے کہا سیاست کی بجائے ریاست بچانی ہے۔

اسحاق ڈار کے وزیرخزانہ بننے کی خبروں پر ان کا کہنا تھا کہ میں نے وزیر خزانہ بننے کے لیے لابی نہیں کی، حکومت بننے سے پہلے شہبازشریف نے کہا تھا کہ تیاری کرو وزارت سے ہٹانے کا استحقاق بھی وزیراعظم کے پاس ہی ہے، اگرمجھے کوئی اور وزارت آفر ہوئی تو دیکھوں گا کہ کام کربھی سکتا ہوں یا نہیں، عمران خان کی تیل کی قیمتوں میں اضافے پر تنقید کا جواب دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ جب ہم تیل کی قیمت بڑھاتے ہیں عمران خان کہتے ہیں چوری ہورہی ہے، کرپشن پرعمران خان کو خاموش رہنا چاہیے کیونکہ عمران خان توشہ خانہ کی گھڑیاں تک ساتھ لیکرچلے گئے اور پوچھا جائے عمران خان نے 190ملین پاونڈز کس کو اور کیوں واپس کیے۔

آئی ایم ایف پروگرام پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف اور پاکستان دونوں میں کمپرومائزہوا ہے کچھ ہم نے آئی ایم ایف کی مانی ہیں اور کچھ باتیں ہم نے بھی منوائی ہیں اور آئی ایم ایف سے معاہدہ جلد ہوجائے گا، انہوں نے مزید کہا عوام کے لیے دو تین ماہ مشکل ہوں گے، 14ماہ میں گروتھ واپس لائیں گے مہنگائی کو کم کریں گے اور جب تک آئی ایم ایف سے جان نہیں چھڑائیں گے توغریب ہی رہیں گے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More