چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل ڈاکٹرقبلہ ایازکی صدارت اجلاس

اسلام آباد: اسلامی نظریاتی کونسل کے2روزہ اجلاس کے پہلے روز 8 نکات پر غور کیا گیا جبکہ دوسرے روز دینی تعلیمی اداروں میں اخلاقی معاملات، تعلیمی اداروں میں طلبا اور طالبات کو ہراساں کرنے کے خلاف بل 2020 پر بھی غور ہوگا۔

اسلامی نظریاتی کونسل کا اجلاس چیئرمین ڈاکٹر قبلہ ایاز کی صدارت میں ہوا۔ اجلاس میں 20 نکاتی ایجنڈے کو غور کے لئے کونسل اراکین کے سامنے پیش کیا گیا۔اسلامی نظریاتی کونسل کے اجلاس کے پہلے روز ایجنڈے کے 20 میں سے 8 نکات پر غور ہوا۔ایجنڈا ایٹم نمبر 9 پر چیئرمین کونسل کا اراکین کو بھرپور تیاری کے ساتھ تجاویز دینے کی ہدایت کی۔

ایٹم نمبر 9 پر دینی مدارس سے متعلق اخلاقی معاملات پر غور کل ہوگا۔تعلیمی اداروں میں طلبا اور طالبات کو ہراساں کرنے کے خلاف بل 2020 پر بھی غور ہوگا۔وزارت مذہبی امور نے تعلیمی اداروں میں ہراسگی سے متعلق بل اسلامی نظریاتی کونسل کے حوالے کیا تھا۔وزارت مذہبی امور نے تعلیمی اداروں میں ہراسگی کے معاملہ کی گیند کونسل کی کورٹ میں پھینک دی۔

اسلامی نظریاتی کونسل کل اجلاس کے دوسرے روز مزید 11 ایجنڈا ایٹم پر غور کرے گی۔عربی زبان کو لازمی قرار دینے کا بل، شادی کی تقریبات کو آسان بنانے کے بل پر غور ہوگا۔ خواجہ سراؤں کے بارے میں آگاہی مہم سے متعلق پشاور کانفرنس بھی ایجنڈے میں شامل کیا گیا ہے جبکہ تحفظ اطفال ایکٹ، جنسی زیادتی کے مجرم کی آختہ کاری پر بھی کونسل شرعی نقطہ نظر دے گی۔

رحمت اللعالمین اتھارٹی کا قیام اور نعت خوانی اور اسکا شرعی اسلوب پر بھی کونسل نقطہ نظر پیش کرے گی۔ رویت ہلال کمیٹی کے قانون سازی کے بل پر بھی کونسل نے غور کیا گیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More