اداکارہ میرا کے تکذیب نکاح کا دعویٰ خارج کرنے کا حکم

لاہور کی سیشن عدالت نے اسکینڈل کوئین اداکارہ میرا کے تکذیب نکاح کا دعویٰ خارج کرنے کا حکم جاری کردیا۔ تحریری فیصلے میں لکھا ہے گیا کہ اداکارہ میرا نے اپنے شوہر کے ساتھ نہ رہنے کیلئے فوجداری اور دیوانی مقدمات دائر کئے مگر عتیق الرحمان سے نکاح نامہ کو جھوٹا اور جعلی قرار دینے میں ناکام رہی۔

لاہور کی سیشن عدالت نے اداکارہ میرا کا تکذیب نکاح کا دعویٰ خارج کرنے کیخلاف اپیل پر تحریری فیصلہ جاری کردیا۔ ایڈیشنل سیشن جج مظہر عباس نے سولہ صفحات پر مشتمل تحریری فیصلے میں لکھا کہ اداکارہ میرا مخالف فریق عتیق الرحمان سے نکاح نامے کو جھوٹا اور جعلی قرار دینے میں ناکام رہی اور فیملی عدالت میں تکذیب نکاح کا دعویٰ بھی ثابت نہیں کرسکی۔

فیصلے میں لکھا گیا کہ میرا کا عتیق الرحمان سے جھگڑا اس انتہاء تک پہنچ گیا کہ میرا نے بطور بیوی عتیق الرحمان کے ساتھ رہنے سے انکار کیا بلکہ اپنے شوہر پر فوجداری اور دیوانی مقدمات بھی دائر کئے۔۔اداکارہ نے دو ستمبر دو ہزار سات میں عتیق الرحمان سے نکاح کیا لیکن کوئی ایسا گواہ پیش نہیں کیا جو نکاح نامے پر دستخط جعلی ہونے کی گواہی دے۔

اداکارہ میرا نے فیملی عدالت میں کنواری ہونے کا دعوی کیا تھا جبکہ عتیق الرحمن نے اداکارہ کے کنوارے پن کیلئے درخواست دائر کی تو میرا نے سختی سے مخالفت کی۔ اداکارہ کو کنوارے پن کے ٹیسٹ کیلئے دائر درخواست پر رضا مندی ظاہر کرنی چاہئیے تھی۔ عدالت نے اہلمد کو حکم دیا کہ اداکارہ کے تکذیب نکاح کا دعوی خارج کرنے کی ڈگری جاری کی جائے جبکہ فیملی کورٹ کے فیصلے کیخلاف دائر اپیل خارج ہونے پر اداکارہ میرا کسی معاوضے کی بھی حقدار نہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More