معاملات افہام تفہیم سے طے ہوجائیں گے، گورنر بلوچستان

کوئٹہ:گورنربلوچستان سے قائد حزب اختلاف ملک سکندرخان ایڈووکیٹ کی قیادت میں وفدنے ملاقات کی ۔ وفد میں سردار عبدالرحمٰن کیھتران، ملک نصیر احمد شاہوانی، نصراللہ زیرے، میر اسد بلوچ، عبدالواحد صدیقی، یونس زیری اور اکبر مینگل شامل تھے۔

گورنر بلوچستان سید ظہور احمد آغا سے صوبائی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف ملک سکندرخان ایڈووکیٹ کی قیادت میں آئے وفد نے گورنر بلوچستان کو اپنے تحفظات سے آگاہ کیا اور اپنا آئینی کردار ادا کرنے کا مطالبہ کیا ۔انہوں نے آئین کے دائرہ کار کے اندر رہ کر اپنے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کروائی۔

اس موقع پر گورنر بلوچستان سید ظہور احمد آغا نے کہا ہے کہ جمہوری حکومت میں آئینی اور جمہوری طریقہ کار کو اختیار کرنے سے ہی عوامی مفادات کے تحفظ کو یقینی بنایا جا سکتا ہے۔کوشش ہے کہ تمام امور و معاملات باہمی افہام تفہیم اور جمہوری طریقے سے پایہ تکمیل تک پہنچ سکیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس تمام پارلیمانی امور و معاملات کو چلانے کا آئینی طریقہ موجود ہے جس کی پاسداری تمام پارلیمنٹرینز پر لازم ہے۔معاملات کو طے کرنے کیلئے ہماری اپنی شاندار اقدار و روایات بھی ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More