تازہ ترین
میجرعزیز بھٹی کے55ویں یوم شہادت پر قوم کا ان کو خراج عقیدت

میجرعزیز بھٹی کے55ویں یوم شہادت پر قوم کا ان کو خراج عقیدت

اسلام آباد: (12 ستمبر 2020) میجرعزیز بھٹی شہید پاک فوج کا ایک ایسا نام ہیں جن کی شجاعت اور جنگی حکمت عملی کو عالمی حربی تاریخ میں غیرمعمولی قراردیا جاتا ہے۔ نشان حیدر پانے والے میجرعزیز بھٹی شہید کو ان کے پچپن ویں یوم شہادت پر قوم خراج عقیدت پیش کرتی ہے۔

میجرعزیزبھٹی چھ اگست انیس سو اٹھائیس کو ہانگ کانگ میں پیدا ہوئے۔ کوئنزکالج تک ہمیشہ اول پوزیشن پرتعلیم حاصل کی۔ دوسری جنگ عظیم میں ہانگ کانگ پرجاپانی قبضہ کے بعد تعلیم جاری نہ رکھ سکے۔ امپیریل جاپان نیوی کاحصہ بنے۔ ملٹری اکیڈمی کاکول کے پہلے لانگ کورس میں نمایاں پوزیشن حاصل کرکے انیس سو پچاس میں پاک فوج میں سیکنڈ لیفٹیننٹ کی حیثیت سے کمیشن حاصل کیا۔

بھارت ناپاک عزائم لے کرپاکستان پرحملہ آور ہوا تو برکی کے محاذ پران کی تعیناتی ہوئی۔ انہوں نے محدود افرادی قوت کے ساتھ دشمن کے عزائم ناکام بنائے اور بہت بڑے لشکرکو چھ دن تک نہ صرف روکے رکھابلکہ کئی بھارتی فوجی جہنم رسیدکرکے انہیں پسپا بھی کرتے رہے۔

گیارہ اور بارہ ستمبرکی درمیانی شب دشمن نے برکی نہرکے ساتھ سترہ پنجاب رجمنٹ کی دفاعی پوزیشنوں پرآٹھ بڑے حملے کئے۔ بارہ ستمبر کی صبح دشمن کے تین ٹینکوں نے میجر عزیز بھٹی کی پوزیشن پرگولہ باری شروع کردی۔ میجرعزیزبھٹی نے جوابی حملے میں دشمن کے دوٹینک تباہ کردیئے۔ اسی اثنا میں ایک گولہ سیدھا انہیں لگااوروہ موقع پرہی شہید ہوگئے۔

میجرعزیزبھٹی شہیدکوان کی بہادری پر پاکستان کے سب سے بڑے فوجی اعزاز نشان حیدر سے نوازا گیا۔

Comments are closed.

Scroll To Top