تازہ ترین
بلدیہ عظمیٰ کراچی کا 24 ارب 85 کروڑ 59 لاکھ کا بجٹ اپوزیشن کے احتجاج کے باوجود منظور

بلدیہ عظمیٰ کراچی کا 24 ارب 85 کروڑ 59 لاکھ کا بجٹ اپوزیشن کے احتجاج کے باوجود منظور

کراچی: (29 جون 2020) میئرکراچی وسیم اختر نے سال 2020-21ء کا 24 ارب 85 کروڑ کا بجٹ پیش کیا جو اپوزیشن کے بھرپور احتجاج کے باوجود منظور کرلیا گیا۔

میئر کراچی وسیم اختر نے بلدیہ عظمیٰ کراچی کا آئندہ مالی سال 2020-21ء کیلئے 24 ارب 85 کروڑ 59 لاکھ 86 ہزار روپے کا میزانیہ کے ایم سی کونسل میں پیش کیا تو دوران تقریر اپوزیشن کی جانب سے شور شرابا شروع کیا گیا۔

میئر کراچی وسیم اختر نے عباسی اسپتال میں کورونا کے مریضوں کے مفت علاج کا عندیہ دیا تو اپوزیشن کی جانب سے جھوٹ جھوٹ کے نعرے لگائے گئے۔ اس دوران پیپلزپارٹی کے اپوزیشن لیڈر کرم اللہ وقاصی نے بجٹ کو پھاڑ کر شدید احتجاج کیا۔

بجٹ اجلاس میں ڈپٹی میئر کراچی سید ارشد حسن اور میٹرو پولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن بھی موجود تھے۔ مالی سال 2020-21ء کے بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا گیا۔ ڈویلپمنٹ پروجیکٹس، کاموں کا تخمینہ 4 ارب 38 کروڑ 77 لاکھ 45 ہزار روپے جبکہ ڈسٹرکٹ اے ڈی پی اخراجات کا تخمینہ 2 ارب 50 کروڑ 5 لاکھ روپے لگایا گیا ہے۔

میڈیکل اینڈ ہیلتھ سروسز کیلئے 5097.242 ملین روپے، جبکہ پینشن فنڈ اور دیگر متفرق اخراجات کیلئے 5855.600 ملین روپے مختص کیے ہیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top