خیبر پختونخوا بجٹ: سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 16 فیصد اضافہ

پشاور: خیبرپختونخوا کا مالی سال 2022-23 کا 1 ہزار 332 ارب روپے کا بجٹ پیش کر دیا گیا ہے۔ بجٹ میں بندوبستی اضلاع کیلئے 1108 ارب جبکہ ضم اضلاع کیلئے 223 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔ تمام سرکاری ملازمین کی تنخواوں میں سولہ فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے۔

خیبر پختونخوا کا مالی سال 2022,23کا 1 ہزار 332 ارب روپے کا بجٹ وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا نے پیش کر دیا ۔ بجٹ میں بندوبستی اضلاع کیلئے 1108 ارب جبکہ ضم اضلاع کیلئے 223 ارب روپے مختص کئے گئے ۔صوبے کا اخراجا ت جاریہ 913 ارب روپے رکھا گیا ہے جس میں بندوبستی اضلاع کیلئے 789 جبکہ ضم اضلاع کیلئے 124 ارب روپے مختص کئے گئے۔ صوبے کا کل ترقیاتی بجٹ 418 ارب روپے پر محیط ہے۔

بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواوں میں سولہ فیصد اضافہ جبکہ پیشن میں پندرہ فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔ 63000 سرکاری ملازمین کو مستقل کیا جائے گا۔ بجٹ میں عوام کو ریلیف دینے کے لیے صحت انصاف کارڈ اور فوڈ کارڈ شروع کیا جائے گا۔711 نئے سکولوں قائم کئے جائیں گے۔

بجٹ میں صوبے کو دہشت گردی کے خلاف جنگ کی مد میں 68 ارب 60 کروڑ روپے ملیں گے۔ وفاق سے آئل، گیس رائلٹی کی مد میں 31 ارب روپے ملیں گے۔ دیگر محاصل کا تخمینہ 212 ارب روپے لگایا گیا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More