گورنر اسٹیٹ بینک کا ڈالر کی قیمت سے متعلق بیان سنگدلی ہے،خواجہ آصف

اسلام آباد: قومی اسمبلی اجلاس میں لیگی رکن خواجہ آصف نے گورنر اسٹیٹ بینک کے بیان کو سیاسی بیان قرار دیتے ہوئے انہیں شٹ اپ کال دینے کا مطالبہ کردیا بولے گورنر اسٹیٹ بینک ملک چلانے کے بجائے دیوالیہ کر رہے ہیں۔ اپوزیشن نے کورم کی نشاندہی کرکے حکومت کی قانون سازی کی کوشش ناکام بنادی اجلاس غیر معینہ مدت تک ملتوی کردیا گیا۔

اسپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت قومی اسمبلی اجلاس میں نکتہ اعتراض پر خواجہ آصف نے گورنر اسٹیٹ بینک کی جانب سے ڈالر کی قیمت میں اضافے کے فائدے سے متعلق بیان کو سنگدلی قرار دیدیا بولے گورنر اسٹیٹ بینک ملک کو چلا نہیں رہے بلکہ دیوالیہ کر رہے ہیں انہیں شٹ اپ کال دی جائے۔

ڈالر کی قیمت میں اضافے کے حوالے سے وفاقی وزیر عمر ایوب خان نے کہا کہ ن لیگ نے روپے کو مستحکم رکھنے کیلئے تئیس اعشاریہ چھ ارب ڈالر قرضہ لیا جس پر نو سو ارب ڈالر سود دیا جا رہا ہے۔ وزیر پارلیمانی امور علی محمد خان نے کہا کہ ن لیگ نے اسٹیٹ بینک سے قرض پر قرض لے کر معیشت کا بیڑہ غرق کردیا۔

اجلاس کے دوران وزارت خزانہ نے تحریری جواب میں بتایا کہ رواں مالی سال کے صرف 3 ماہ 18 دن کے دوران ڈالر کے مقابلے میں 8.8 روپے کمی ہوئی جبکہ رواں مالی سال کے پہلے دو ماہ کے دوران دو ارب انتیس کروڑ ڈالر کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ریکارڈ ہوا۔ گزشتہ سال اسی عرصے میں کرنٹ اکاؤنٹ تراسی کروڑ اسی لاکھ ڈالر سے سرپلس رہا۔ حکومت کی جانب سے قانون سازی کی کوشش پر نوید قمر نے کورم کی نشاندہی کردی کورم پورا نہ ہونے پر اجلاس غیر معینہ مدت تک ملتوی کردیا گیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More