ساڑھے تین سال قبل ووٹ کی حرمت پر ڈاکہ ڈالا گیا، خواجہ آصف

سیالکوٹ: پاکستان مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما خواجہ محمد آصف نے کہا کہ ساڑھے تین سال قبل ووٹ کی حرمت پر ڈاکہ ڈالا گیا، اسکے نتائج پوری قوم بھگت رہی ہے، جنہوں نے ان کو اقتدار میں لانے کے لئے سرپرستی کی وہ بھی پچھتا رہے ہیں۔

سیالکوٹ میں ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنما خواجہ محمد آصف نے کہا کہ اپوزیشن نے قاتل بجٹ اور اسٹیٹ بینک کے قوانین کو روندنے کی حکومتی کو شش کو روکنے کی کوشش کی ہے۔

خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ ہزاروں ارب کا ڈاکہ پاکستانی عوام پر ڈالا گیالوگ تماشہ دیکھتے رہے شائد حالات تبدیل ہو جائیں لیکن چند افراد اپنی ہٹ دھرمی کی وجہ سے چور دروازے اور آئین کی خلاف ورزی کر کے اقتدار میں آتے ہیں۔

انہوں نے کہا آج عمران خان ہمارا اس لئے حکمران ہے کہ ہم نے اپنی سابقہ اقدار کو پس پشت ڈال دیا۔ آج مذہب کے ساتھ کیا کچھ ہو رہا ہے سب کے سامنے ہے یہی نہیں رات کے اندھیروں میں ووٹ کی حرمت پر ڈاکہ ڈالا جاتا ہے۔

انہوں نے کہا ستر سالہ تاریخ میں اتنے قرضے نہیں لئے گے جتنے ان ساڑھے تین سالوں میں لئے گے ہیں یہ کہتا تھا میں خودکشی کر لوں گا، اسکے لئے بھی غیرت کی ضرورت ہوتی ہے۔

خواجہ آصف نے کہاآج اسکی پارٹی فنڈ میں چار افراد کی ٹی ٹی سامنے آئی ہیں اربوں روپے دئے گے نیب اس سے پوچھے پیسے کہاں گئے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More