وزیر دفاع خواجہ آصف نے عمران خان کو ملکی سلامتی کیلئے خطرہ قرار دیدیا

آئی ایم ایف پرگروام کے خلاف سازش اور فوجی قیادت پر حملہ کا بھی الزام کہتے ہیں۔ عمران خان نے اپنے مفاد کیلئے ملکی مفادات کو داؤ پرلگایا اور کل سپہ سالار سے متعلق شک وشبہات پیدا کرنے کی بھی کوشش کی۔ وزیر دفاع نے عمران خان کے خلاف لمبی کارروائیوں کا بھی اعلان کیا۔

پاکستان تحریک انصاف عمران خان کا آرمی چیف کی تعیناتی کے بیان پر وفاقی وزیر دفاع خواجہ آصف نے چیئرمین پی ٹی آئی کو نشانے پر رکھ لیا۔ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ عمران خان کا بیان شہدا کی توہین ہے۔ عدم اعتماد کے بعد سے عمران خان مسلسل مسلح افواج کو تنقید کرکے القابات دے رہے ہیں۔

خواجہ آصف نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان نے اپنے دور میں تقرریوں کو سیاست کا موضوع بنایا۔گزشتہ روز عمران خان نے کہا کہ وہ مرضی کےآرمی چیف آئیں گے تو ان کی غلطیوں پر پردہ ڈالیں گے۔ فوج سیاستدانوں کو تحفظ نہیں دے سکتی۔ سپہ سالار سے متعلق شک پیدا کرنے کی کوشش کی گئی۔ آرمی چیف کی تعیناتی میں تین ماہ ہیں، اسے موضوعِ بحث بنانا مناسب نہیں۔

وزیر دفاع نے بتایا کہ عمران خان کے خلاف آئندہ لمبی کارروائیاں شروع ہونے والی ہیں جو کہ قانونی پہلو دیکھ کر کی جائیں گی۔ ہمارے قانونی ماہرین اس کا جائزہ لے رہے ہیں۔ عمران کا فارن فنڈنگ کیس بہت سی مالی بے ضابطگیوں کو سامنے لایا ہے۔ فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ ان کیلئے مسائل پیدا کرےگا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More