کرتار پور میں فوٹو شوٹ پر نجی کمپنی کے مالک نے سکھ برادری سے معافی مانگ لی

لاہور: سکھوں کےمذہبی مقام کرتار پور میں فوٹو شوٹ کے معاملے پر نجی کمپنی کے مالک نے سکھ برادری سےمعافی مانگ لی۔

کمپنی کے مالک شہریار یوسف نے کہا یہ فوٹو شوٹ ہماری کمپنی کے زیر اہتمام نہیں ہوا تھا لیکن اس حرکت پر پھر بھی شرمندہ ہوں۔

واضح رہے کہ ملبوسات تیار کرنےوالی نجی کمپنی کے سماجی رابطوں کے پلیٹ فارمز پر مذہبی مقام گوردوارہ کرتار پور کے احاطے میں سرخ لباس زیب تن کئے خوبرو حسینہ کی تصاویر پر سکھ برادری میں غصے کی لہر دوڑ گئی ۔اس معاملے پر شدید رد عمل دیتے ہوئے سکھ برادری کا کہناہے ہمارے مقدس مقام پر ننگے سر تصاویر بنوانے کی اجازت نہیں ہے۔

دوسری جانب وزیر اعلی پنجاب نے بھی گوردوارہ کرتاپور کے احاطے میں فوٹو شوٹ کا نوٹس لے کر معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا۔عثمان بزدار نے چیف سیکریٹری سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے ماڈلنگ کی اجازت دینے والے عملے کے خلاف کارروائی کا حکم بھی دے دیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More