تازہ ترین
کراچی: سوک سینٹر کے ڈی اے کے دو افسران کے قتل کا مقدمہ درج

کراچی: سوک سینٹر کے ڈی اے کے دو افسران کے قتل کا مقدمہ درج

کراچی: (16 ستمبر 2020) کراچی میں سوک سینٹر کے ڈی اے لینڈ ڈپارٹمنٹ میں دوافسران کے قتل کا مقدمہ درج ۔ مقتول افسر وسیم عثمانی کے بھائی کی مدعیت میں مقدمہ درج کیاگیا۔ تبادلے کے معاملے پراسسٹنٹ ڈائریکٹرحفیظ نے مشتعل ہو کر فائرنگ کر دی تھی۔ ایڈیشنل ڈائریکٹر وسیم رضا اوراسسٹنٹ ڈائریکٹر وسیم عثمانی مارے گئے۔ حفیظ الحسن نے گولی مارکر خود کو بھی زخمی کر لیا تھا۔

کراچی سوک سینٹر کےڈی اےلینڈ ڈیپارٹمنٹ میں فائرنگ سے ایڈیشنل ڈائریکٹرلینڈ وسیم رضا اور اسسٹنٹ ڈائریکٹروسیم عثمانی جاں بحق ہوگئے۔ فائرنگ سے ایک افسر اسسٹنٹ ڈائریکٹر حفیظ الحسن زخمی بھی ہوئے۔ گولی چلانے والا حفیظ اپنے ٹرانسفر پر دونوں مقتول افسران سے نالاں تھا۔حفیظ نے ہی اپنے آپ کو خود زخمی کيا۔ گولی چلانے والا حفیظ اپنے ٹرانسفر پر دونوں مقتول افسران سے نالاں تھا۔ حفیظ نے ہی اپنے آپ کو زخمی کيا۔ ميرا تبادلہ کيوں کيا؟حفیظ کاسوال۔ 15 سال سے تعينات ہوں ، کہيں نہيں جاؤں گا، حفیظ کا واردات سے قبل مقتولین سے مکالمہ۔

ذرائع کے مطابق عبدالحفيظ 15 سال سے اسکيم 33 ميٹروويل ميں تعينات تھا۔ ايڈيشنل ڈائريکٹر وسيم رضا نے عبدالحفيظ کا اسکیم 33 سے تبادلہ کيا تھا۔ تبادلے کی وجہ زمينوں کے معاملات ميں ہيراپھیری اور رقم وصولی نہ بتلانا تھی۔ تبادلہ رکوانے کيلیے عبدالحفيظ نے پہلے 2 روز تک مقتولین کی منتيں کيں۔ بات نہ بنی توحفیظ دھمکیوں پر اتر آیا۔ آج بھی يہی مسئلہ زيربحث آيا تو ايڈيشنل ڈائريکٹر وسيم رضا کے نہ ماننے پر عبدالحفيظ نے گولياں چلادیں۔

کراچی پولیس نے فائرنگ کرنے والے زخمی ملزم حفیظ کا بیان قلمبند۔ حفیظ نے پولیس کو بیان دیا ہے کہ کافی عرصےسے دونوں افسران سے کام مانگ رہا تھاجو نہیں دےرہےتھے۔ متعدد بار کام نہ دینے پر اداس ہوا، پستول گھرسے لایا تھا۔ دونوں نے کمرے میں پکڑنے کی کوشش کی تو پستول نکال لی۔ دونوں افسران نے پکڑا تو گولیاں چل گئیں۔ اندازہ نہیں تھا کہ اتنے فائر ہوجائیں گے۔

ایس ایس پی ایسٹ نے صحافیوں کو بتایا کہ جاں بحق وسیم عثمانی کے بھائی کی مدعیت میں مقدمہ درج کیاجارہاہے۔مقدمے میں حفیظ الحسن کو نامزد کیا جائے گا۔

Comments are closed.

Scroll To Top