مولانا فضل الرحمان کا جمعہ کو یوم تحفظ آئین پاکستان منانے کا اعلان

اسلام آباد: جمعیت علمائے اسلام (ف) نے بروز جمعہ کو ملک بھر میں یوم تحفظ آئین پاکستان کے طورپر منانے کا اعلان کردیا ۔

امیر جے یو آئی ف مولانافضل الرحمان نے میڈیا نمائندوں سے گفتگو میں کہا کہ عمران خان نے آئین کوپامال کیاجو ملکی وحدت کے لیے حساس ہے۔اگر آئین کی توقیر کو خاک میں ملایا جاتا ہے تو پھرپاکستان کا وجود ایک سوالیہ نشان بن جائے گا۔ آنے والےجمعہ یوم تحفظ آئین پاکستان کے طورپرمنایا جائے گا۔

اپوزیشن اتحاد کے سربراہ نے کہا کہ ہم عدالت کوڈکٹیٹ نہیں کرسکتے ہیں مگر نارمل پروسیڈنگ سے قوم میں بے چینی پائی جارہی ہے ۔ ملکی وحدت پارلیمان، جمہوریت پاکستان کی نظریاتی بنیادوں کوہلا کررکھ دیا گیا ہے۔ حکومت کے غیر آئینی اقدام سے منصفانہ انتخابات کی توقع نہیں کی جاسکتی ہے۔

مولانافضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ڈپٹی اسپیکر کی رولنگ کو کالعدم اور نئے وزیراعظم کے انتخاب کا حق دیا جائے ۔ امیر جے یو آئی نے دعویٰ کیا کہ چند دنوں میں واضح ہو جائے گا کہ خط جھوٹ جبکہ اس کے مندرجات بھی جعلی ہیں۔ سیکیورٹی کمیٹی کے ذمہ داران نے کہہ دیا پورے متن میں غیرملکی اثرات نظرنہیں آئے۔خط توروز مرہ کا معاملہ ہے۔ چند دن میں خط بھی مرجائے گا لہرانے والا ہاتھ بھی شیل ہوجائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ نگران حکومت کی تشکیل کے لیے ڈرامہ کیا جارہا ہے۔ تحریک انصاف کے کارکن نوجوانوں اورجمہوری قوتوں کواشتعال دلا کرملک میں انارکی کے حالات پیدا کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More