اعلیٰ شخصیات کی تحقیقات میں مداخلت، ڈی جی ایف آئی اے اور ڈائریکٹرلاء طلب

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے اعلیٰ شخصیات کی جانب سے تحقیقات میں مداخلت کے کیس میں ڈی جی ایف آئی اے اور ڈائریکٹر لاء کو ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا ہے۔

حکومتی شخصیات کی جانب سے تحقیقات میں مبینہ مداخلت از خود نوٹس کے حوالے سے سپریم کورٹ نے 27 مئی کی سماعت کا تحریری حکم نامہ جاری کر دیا ۔

عدالت نے ای سی ایل رولز میں ترمیم کے بعد بیرون ملک جانے والوں کا ریکارڈ طلب کرتے ہوئے کہا کہ ای سی ایل رولز میں ترمیم کا اطلاق گزشتہ تاریخوں سے کیا گیا، دیکھنا ہوگاترمیم سے مستفیدوزراءنےکابینہ اجلاس سے خود کو الگ کیا تھا یا نہیں۔

عدالت نے نیب ملزمان کے نام ای سی ایل سے نکالنے کی وجوہات طلب کر لی ہیں، عدالت نے کہا نیب بتائے 174 ملزمان کے نام کس بنیاد پر ای سی ایل میں ڈالے گئے تھے۔

عدالت نے ڈی جی ایف آئی اے اور ڈائریکٹر لاء آئندہ سماعت پر ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More