پیغمبراسلام کی توہین آزادی اظہار رائے نہیں ہے، روسی صدر

ماسکو: روس کے صدر ولادی میر پیوٹن نے کہاہےکہ پیغمبر اسلام کی توہین آزادی اظہار رائے نہیں ہے۔ مذہبی آزادی میں رکاوٹ کے بغیر فنکارانہ آزادی کی اہمیت کا اظہار کیا۔

غیرملکی خبرایجنسی کے مطابق ماسکو میں سالانہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے روس کے صدر نے کہا کہ پیغمبر اسلام کی توہین آزادی اظہار میں شمار نہیں ہوتی ہے ۔پیغمبر کی توہین مذہبی آزادی کی خلاف ورزی اور اسلام کوماننے والے لوگوں کے مقدس جذبات کی خلاف ورزی ہے۔

روسی صدر پیوٹن نے نازیوں کی تصاویر کو ویب سائٹس پر پوسٹ کرنے پر بھی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ کارروائیاں انتہا پسندانہ انتقامی کارروائیوں کو جنم دیتی ہیں۔ پیرس میں چارلی ہیبڈو میگزین کے ادارتی دفتر پر پیغمبر اسلام کے کارٹون کی اشاعت کے بعد حملہ ہوا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More