مہنگائی کا جن بے قابو، شرح 15 اعشاریہ 23 فیصد ہوگئی

اسلام آباد: ملک میں ایک ہفتے کے دوران مہنگائی کی شرح میں 0اعشاریہ 4 فیصد بڑھ گئی جبکہ مہنگائی کی مجموعی شرح 15 اعشاریہ 23 فیصد ریکارڈ کی گئی ۔

ادارہ شماریات کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق ایک ہفتے کے دوران انیس اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ اور تیرہ اشیاء کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی۔اعدادوشمار کے مطابق ایک ہفتے کے دوران برائلر مرغی کی فی کلو قیمت میں 25روپے95پیسے کا اضافہ ہوا جس سے برائلر مرغی کی فی کلو قیمت 279 روپے 55 پیسے کی سطح پر پہنچ گئی۔ایل پی جی کا گھریلو سیلنڈر 217 روپے 57 پیسے مہنگا ہونے سے اس کی قیمت 2306 روپے بڑھ کر 2523روپے تک ہوگئی۔

ایک ہفتے کے دوران گھی کے پیکٹ کی قیمت 16 روپے 71 پیسے مزیدبڑھی۔ڈھائی کلو گھی کا ٹن 38روپے 56 پیسے مہنگا ہوا۔مسٹرڈ آئل کی فی کلو قیمت میں 12 روپے 33 پیسے کا اضافہ ہوا۔ایک ہفتے میں بچوں کا خشک دودھ 5 روپے 69 پیسے مہنگا ہوا، گرم مصالحہ ،دہی چائے کی پتی، مٹن، اور تازہ دودھ بھی مہنگاہوا۔

رپورٹ کے مطابق ٹماٹروں کی فی کلو قیمت میں 37روپے28پیسے اورانڈوں کی فی درجن قیمت میں بھی 10روپے 71 پیسے کی کمی ہوئی،پیٹرول اور ڈیزل کی فی لیٹر قیمت میں 10 روپے سستاہوا، لہسن،دالوں،چینی پیاز اور گڑ کی قیمتوں میں بھی کمی ہوئی،چاول ،جلانے کی لکڑی،ماچس سمیت 19 اشیاء کی قیمتوں میں استحکام رہا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More