پی ٹی آئی کا 2019 کا آئین معطل، 2015 کا پرانا آئین بحال

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت پی ٹی آئی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ سینٹرل ایگیزیکٹو کمیٹی نے پارٹی آئین کے مسودہ کی منظوری دے دی ہے۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم کی زیر صدارت پی ٹی آئی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پارٹی آئین کے مسودہ کی منظوری دے دی۔ سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی نے پی ٹی آئی کا 2019 کا آئین کالعدم قرار دیکر 2015 کا پرانا آئین بحال کر دیا ۔

ذرائع نے بتایا کہ آئینی نظر ثانی کمیٹی کو آئین میں مزید بہتری کا ٹاسک سونپ دیا گیا۔2015 آئین کے مطابق 40 رکنی کورکمیٹی قائم کی جائے گی۔24 رکنی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی قائم کی جائے گی۔2015آئین کے تحت قومی سطح پر پارٹی کا الیکشن کمیشن بھی تشکیل دیا جائے گا جبکہ پارٹی عہدوں کی مدت دو سال ہو گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More