پرامن انقلاب کو روکا تو پھر کھیل سب کے ہاتھ سے نکل جائے گا، عمران خان

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا کہ موجودہ امپورٹڈ حکومت نے سازش کے تحت ہماری حکومت گراکر اپنےگیارہ سو ارب کرپشن کے کیس معاف کروائے،کرپشن کیسز کے چار گواہ ہارٹ اٹیک سے نہیں مرے بلکہ مروائے گئے ہیں۔ ہمیں بدنام کرنےکیلئے جو حربے استعمال ہورہے ہیں سب ناکام ہوں گے۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اتمانزئی چارسدہ میں جلسہ سے خطاب کے دوران کہا کہ ووٹ کے ذریعے تبدیلی نہ آئی تو پھر انقلاب سب کچھ بہا کر لے جائے گا۔ پرامن انقلاب کو روکا تو پھر کھیل سب کے ہاتھ سے نکل جائے گا۔ انقلاب آئے گا تو سب کچھ بہا کر لے جائیگا۔ حقیقی آزادی کیلئے جب کال دونگا تو سب نے نکلنا ہے۔ حکومت میچ نہیں جیت سکتی۔ یہ ہارے ہوئے کھلاڑی ہیں۔ حکومت نے گیارہ سو ارب کرپشن کے کیس معاف کروا لیے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے دور میں ایک سو اٹہتر روپے کا ڈالر تھا انہوں نے دو سو چھتیس تک پہنچا دیا۔ہمارے دور میں تیل ایک سو تین ڈالر فی بیرل تھی آج ترانوے ڈالر ہے لیکن حکمران پھر بھی عوام پر مہنگے داموں پٹرول فروخت کررہی ہے۔حکمرانوں نے مہنگائی کے ریکارڈ توڑ دیئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جن لیڈرز کے پیسے ملک سے باہر ہو ان کو کبھی ووٹ نہیں دینا چاہیے۔مغرب بھی ایسے لوگوں پر اعتماد نہیں کرتا جن کے اپنے پیسے باہر پڑے ہو اور دوسرے ممالک سے مدد مانگتے رہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت میڈیا پر دباؤ ڈال رہی ہے لیکن ان کا وقت بہت کم ہے، موجودہ حکمرانوں کے خلاف جلد کال دوں گا، صاف اور شفاف الیکشن ہی مسائل کا واحد حل ہے،ایمپورڈ چور حکومت کو کھبی قبول نہیں کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ ٹیلی تھون کے ذریعے ہم نے دس ارب روپے اکھٹے کئے جن سے متاثرین سیلاب کی مدد کریں گے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More