عمران خان کی بریت کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں اپیل دائر

اسلام آباد: حکومت نے سابق وزیر اعظم عمران خان کی پارلیمنٹ حملہ کیس میں بریت کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں اپیل دائر کر دی ہے،شاہ محمود قریشی، پرویز خٹک اور اسد عمر کی بریت کو بھی چیلنج کیا گیا ہے۔

حکومت کی جانب سے اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائراپیل میں پارلیمنٹ حملہ کیس میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی بریت کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی استدعا کی گئی ہے۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ عمران خان کے ارتکابِ جرم کے کافی دستاویزی اور ویڈیو شواہدموجود ہیں،ٹرائل کورٹ نے عینی شاہدین کے بیانات کو نظرانداز کر کے عمران خان کو بری کیا پبلک پراسیکیوٹرز نے خلاف قانون عمران خان کی بریت کی حمایت کی، ٹرائل کورٹ نے وقوعہ کے متاثرین کو نوٹس کیے اور سنے بغیر عمران خان کو بری کیا۔

اپیل میں موقف اختیار کیاگیا کہ انسداد دہشت گردی عدالت کے فیصلہ خلاف قانون ہے ٹرائل کورٹ نے جلدبازی میں فیصلہ کیاجسے کالعدم قرار دیا جائے، انسداد دہشت گردی عدالت نے 29 اکتوبر 2020 کو عمران خان کو پارلیمنٹ حملہ کیس میں بری کیا تھا،،اسی کیس میں شاہ محمود قریشی، پرویز خٹک اور اسد عمر کی بریت کے خلاف بھی اپیل دائر کی گئی ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More