مسلط کردہ ظالم حکمرانوں نے ملکی معیشت تباہ کی، سراج الحق

لاہور:امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا کہنا ہے کہ قرارداد پاکستان سے لے کر قیام پاکستان کے سات سال اسلامیان برصغیر کی عظیم قربانیوں کی یادگار ہیں۔ملک آزاد ہونے کے بعد قیام پاکستان کے مقاصد حاصل نہ ہو سکے۔ جاگیرداروں، وڈیروں اور کرپٹ سرمایہ داروں نے وطن عزیز کو ہائی جیک کر لیا اور یہ سلسلہ سات دہائیوں سے جاری ہے۔

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکمران اشرافیہ نے ملک کے نظریہ کو بھی نقصان پہنچایا اور جغرافیہ کو بھی۔ قوم پر مسلط ظالم حکمرانوں نے ملک کی معیشت تباہ کی۔ادارے کمزور کیے اور عوام کو لسانی، صوبائی، ذات پات کے نام پر مختلف تعصبات میں تقسیم کر کے اپنے اقتدار کو طول دیا۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت خیبرپختونخوا میں بلدیاتی الیکشن کے دوران آئین و قانون کی دھجیاں اڑا رہی ہے۔سرکاری وسائل پر جلسے جلوس منعقد ہو رہے ہیں جن میں الیکشن کمیشن کے قوانین کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہو رہی ہے۔وزیراعظم خود الیکشن کمیشن کا مذاق اڑا رہے ہیں۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ ملک کی آزادی کے لیے قربانیوں کا مقصد یہاں اسلامیان برصغیر کی امنگوں کے مطابق اسلامی نظام کا قیام تھا۔اگر پاکستان کو اس کے قیام کے بعد قرآن و سنت کا حقیقی نظام مل جاتا تو پاکستان دولخت نہ ہوتا۔ پاکستان کے عوام سٹیٹس کو سے تنگ آ چکے ہیں اور حقیقی تبدیلی کے منتظر ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More