لگژری آئٹمزکی امپورٹ پر پابندی عائد جارہی ہے، مریم اورنگزیب

اسلام آباد: حکومت نے تمام لگژری آئٹمزاور گاڑیوں کی امپورٹ پر مکمل پابندی عائد کرتے ہوئے ملکی وسائل پر انحصار کرنے کا فیصلہ کرلیا ۔ وفاقی وزیراطلاعات مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ ملک کے اندر ابھی ایمرجنسی صورتحال ہے۔عوام کو موجودہ صورتحال میں قربانی دینا پڑے گی۔4ہفتے کی حکومت سے سوال کرنے والوں کو شرم آنی چاہیے۔

وفاقی وزیراطلاعات ونشریات نے پریس کانفرنس میں حکومت کے اہم فیصلوں سے عوام کو آگاہ کردیا۔مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے تاریخی میٹنگ کی جس میں معاشی پلان وضع کیا گیا۔چار سال میں ملکی معیشت کو تباہ کیا گیا تاہم حکومت نے معاشی پلان بنا لیا ہے۔ پاکستان کی تاریخ میں پہلی بارغیرضروری لگژری آئٹمزکی امپورٹ پرمکمل پابندی لگائی جارہی ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ جب 2018میں مسلم لیگ (ن) کی حکومت گئی تو ڈالر کی قیمت 115 روپے تھی ۔سازشی کنٹینر پر کھڑے ہو کر چار ہفتوں کی حکومت سے سوال کرتے ہیں انہیں اپنے گریبان میں جھانکنا چاہئے اور تھوڑی سی شرم کرنی چاہئے کہ ڈالر 189 پر ان کے دور حکومت میں گیا غیر ملکی ذخائر کی بدحالی ان کے دور میں ہوئی۔

مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ ہماری ترجیح درآمدات پر انحصار کم کرنا ہے اور برآمدات پر مبنی اکنامک پالیسی متعارف کرانا ہے جس سے مقامی صنعت ترقی کرے گی اور ملک کے اندر مقامی صنعتوں کے فروغ سے لوگوں کو روزگار میسر آئے گا۔

وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ نوے دن میں جو کرپشن ختم کرنے والوں نے کرپشن کے ذریعے پاکستان میں مہنگائی میں اضافہ کیا کارٹلز اور مافیاز نے چار سال پاکستان کے عوام کو لوٹا جتنے وزراء اور مشیر امپورٹ ہو کر آئے تھے آج سب ایکسپورٹ ہو کر پاکستان سے باہر چلے گئے ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More