آئی ایم ایف کامطالبہ تھا تمام اشیاء پر 17 فیصد جی ایس ٹی لگائیں، چیئرمین ایف بی آر

کراچی: چیئرمین ایف بی آر ڈاکٹر محمد اشفاق احمد کا کہنا ہے کہ پہلی بار ٹیکس اصلاحات پر بڑے فیصلے کیے گئے۔ ماضی میں جب بھی آئی ایم ایف کا مطالبہ آتا تھا ہم نئے ٹیکس لگا دیتے تھے مگر پالیسی سطح کی تبدیلیوں پر کسی نے توجہ نہ دی کیونکہ یہ غیر مقبول فیصلے تھے۔

کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین ایف بی آر ڈاکٹر محمد اشفاق احمد کا کہنا تھا کہ حکومت نے جی ایس ٹی چھوٹ واپس لینے کا بڑا فیصلہ کیا۔ آئی ایم ایف کے مطالبہ پر نئے ٹیکس لگا دیئے جاتے تھے مگر درکار پالیسی سطح کی تبدیلیوں پر کسی نے توجہ نہ دی کیونکہ یہ غیر مقبول فیصلے تھے۔

چیئرمین ایف بی آر نے کہا کہ ملکی ادویات سازی کی صنعت کے خام مال پر ٹیکس عائد ہوا ہے مگر برآمدی صنعت کا درجہ ملنے سے اس کو ریفنڈ کی سہولت حاصل ہو گی جس سے ادویات کی قیمتوں میں بیس فیصد تک کمی ہو گی۔

چیئرمین ایف بی آر کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف پروگرام سے نکلنے کیلئے ضروری ہے کہ ٹیکس وصولیاں بڑھائی جائیں۔ چیئرمین ایف بی آر کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کا مذاکرات میں مطالبہ تھا کہ تمام اشیاء پر 17 فیصد جی ایس ٹی لگائیں اگر کسی کو سہولت دینا ہے تو سبسڈی کے ذریعے دی جائے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More