آئی ایم ایف معاہدے سے ملک میں استحکام آئے گا، فواد چوہدری

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ کسی پارٹی نے تحریک انصاف کی طرح پارٹی فنڈنگ کا حساب نہیں دیا ۔ 40 ہزارڈونرکا حساب دیا اور سرخروہوئے اب ہم انتظارکررہے ہیں کہ پیپلزپارٹی اور (ن)لیگ کی فنڈنگ سامنے آئے۔

وزیراطلاعات فواد چوہدری نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف کا نیا سیکرٹری اطلاعات فرخ حبیب کو مقرر کیا گیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کارکنوں کوپنجاب میں بلدیاتی الیکشن کی تیاری کا حکم دیا۔

فواد چوہدری نے کہاکہ آئندہ چند ماہ میں مہنگائی کی کمر ٹوٹے گی اور معاشی استحکام بھی آئے گا۔ مہنگائی کے خاتمے کے لیے جامع منصوبہ تیارکیا ہے۔ فنانس بل جنوری کے دوسرے ہفتے پاس ہوجائے گا۔ 10 جنوری کو منی بل پاس ہو جائے گا۔ اسٹیٹ بینک بل بھی اسی کے ساتھ پاس ہوجائے گا۔ آئی ایم ایف معاہدے کے بعد استحکام آئے گا۔

وزیراطلاعات کاکہناتھاکہ صحافیوں کیساتھ بدتمیزی پر مریم نواز کو معافی مانگنی چاہیے۔ سی پی این ای نے بھی معافی کا مطالبہ کیا ہے۔پرویزرشید سینیئرسیاستدان ان کی طرف سے بھی معافی آنی چاہیے۔ مسلم لیگ (ن)کوبھی معافی مانگنی چاہیے۔ مریم نوازنے پرویزرشید کیساتھ فون لیک کوتسلیم کیا۔ اب مریم نوازنے فون لیک کا اعتراف کرلیا ہے۔ان میں اگرشرم ہوتی تو میڈیا کے لوگوں کوگالیاں نکالنے پرمعافی مانگتی۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ کو منی لانڈرنگ کے لیے استعمال کیا گیا۔ نوازشریف کو17ماہ ہو گئے،کبھی ایک، کبھی دوسرے ریسٹورنٹ میں جاتے ہیں لیکن علاج نہیں کرایا۔ان کی جان پیسوں میں ہے۔ یہ وہ طوطا ہے جس میں شریف خاندان کی جان ہے۔ نوازشریف فیملی کو یہ پیسے واپس کرنا ہوں گے۔

وزیراطلاعات نے کہا کہ ایک تحریک شروع، دوسرا بچہ استعفی مانگ رہا ہے۔ یہ ضروری نہیں کہ آپ نانا، دادی بن جائیں اورعقل بھی آجائے۔ حیران ہوتا ہوں کیسے کیسے لوگ مریم نوازکے پیچھے ہاتھ باندھ کرکھڑے ہوتے ہیں۔پیپلزپارٹی،(ن)لیگ کا دور ختم ہوچکا ہے۔ اب مسلم لیگ، پیپلزپارٹی میں نئے لوگوں کوسامنے آنا چاہیے۔

اسٹیبلشمنٹ کے حوالے سے فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ چوبیس گھنٹے اس سے متعلق گفتگو کرنے سے ادارے کمزورہوتے ہیں۔ وہ پارٹی ڈیلیں چاہتی ہیں جن کا اپنا کوئی قد نہیں ہے۔ اس لیے یہ ڈیل کی باتیں کرتے رہتے ہیں۔ آئین میں تمام اداروں کا کردارلکھ دیا گیا ہے اسی کے مطابق اداروں نے اپنا کام کرنا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More