اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی، ایمان مزاری شامل تفتیش

اسلام آباد: ملکی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کے مقدمہ میں ایمان مزاری کو شامل تفتیش ہونے کی ہدایت کردی گئی ۔اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے عبوری ضمانت منظور کرنے کا تحریری حکم نامہ جاری کر دیا۔

ملکی اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کے مقدمہ میں ایمان مزاری کو شامل تفتیش ہونے کی ہدایت جاری کردی گئیں ہیں۔ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے عبوری ضمانت منظور کرنے کا تحریری حکم نامہ جاری کر دیا۔اسلام آباد ہائی کورٹ نے ریاست اور مدعی مقدمہ کو 9 جون کے لیے نوٹس جاری کرکے جواب طلب کرلیا ۔

تحریری حکم نامہ میں کہا گیا ہے کہ پٹیشنر کے مطابق بدنیتی کے تحت ایف آئی آر درج کرائی گئی جس کا مقصد تضحیک کرنا ہے۔پٹیشنر کےوکیل کے مطابق مقدمہ میں گرفتاری کا خدشہ ہے۔عدالت نے ایک ہزار روپے کے مچلکوں کے عوض عبوری ضمانت منظور کی جاتی ہے۔ پٹیشنر عدالتی پالیسی کے مطابق کیش شورٹی ضمانت جمع کرانے میں آزاد ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More