عدم اعتماد ناکام ہونے کے بعد تینوں کو چھوڑونگا نہیں، عمران خان

دیر:وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ آج جو لوگ اکٹھے ہوئے ہیں پچھلے تیس سال سے ملک پر انہوں نے حکومت کی ہے۔ آج ہمارے پاسپورٹ کی جو عزت کم ہوئی ہے، وہ بھی ان لوگوں کی وجہ سے ہی ہوئی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے لوئر دیر میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جنرل باجوہ نے کہا مولانا فضل الرحمان کو ڈیزل نہ کہیں تو میں نے باجوہ صاحب سے کہا کہ میں تو نہیں کہتا ہوں بلکہ قوم نے ہی نام ڈیزل رکھ دیا ہے۔ عمران خان نے بلاول کی اردو کو بھی آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ جب آپ کسی کو زبردستی لیڈر بنانے کی کوشش کریں تو پھر ایسا ہی ہوتا ہے کہ کانپیں ٹانگتی ہیں۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ میں خود تحریک عدم اعتماد کے لیے دعا کررہا تھا۔ اب میں ایک گیند سے تین وکٹیں گراؤں گا۔ تحریک عدم اعتماد کا میچ جیتنے کے بعد دیکھیں کہ میں ان کے ساتھ کیا کرتا ہوں۔ ایک طرف خطرناک ڈیزل، دوسرا آصف زرداری اور تیسرا ڈرامہ باز شوباز شریف ہے ۔یہ تین چوہے نکلے ہیں میرا شکار کرنے کے لیے ۔

عمران خان نے کہا کہ زرداری اور نوازشریف نے ایک مرتبہ بھی ڈرون حملوں کی مذمت تک نہیں کی۔ان لوگوں نے اس لیے مذمت نہیں کی کیونکہ ان کے اربوں روپے بیرون ملک رکھے ہوئے ہیں۔آج میرا مقابلہ ان تین ڈاکوؤں سے ہے۔یہ تینوں ڈاکو مجھ سے این آر او مانگ رہے ہیں۔گورنمنٹ گرانا تو آسان ہے، مجھے اپنی جان بھی دینی پڑی تو میں ان تینوں کو نہیں چھوڑوں گا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان فلسفے کی بنیاد پر قائم ہوا۔ دنیا کے لیے پاکستان ایک مثال بنے گا۔ ہم نے وہ قدم اٹھایا ہے جو ایک امیر ملک بھی نہیں کرسکتا ہے۔ہر شہری کو دس لاکھ روپے کی ہیلتھ انشورنس دینے کا کام تو کوئی امیر ملک بھی نہیں کرسکتا ہے ۔ احساس راشن پروگرام سے دو کروڑ خاندانوں کو راشن پر تیس فیصد رعایت دیں گے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More