رمضان شوگرملزکیس:شہبازاورحمزہ شہباز تیرہ دسمبر کودوبارہ طلب

لاہور کی احتساب عدالت نے آشیانہ اقبال کیس میں شہباز شریف کے شریک ملزمان کی بریت کی درخواستوں پر نیب سے چھ دسمبر کو جواب طلب کرلیا۔ عدالت نے رمضان شوگر ملز اور منی لانڈرنگ کیس کی سماعت تیرہ دسمبر تک ملتوی کرتے ہوئے شہباز شریف خاندان کے اثاثے منجمد کرنے کے خلاف درخواستوں پر وکلا کو دلائل کیلئے دوبارہ طلب کرلیا۔

رمضان شوگر ملز کیس میں شہباز شریف، حمزہ شہباز جبکہ نیب کے دو گواہ احتساب عدالت میں پیش ہوئے۔ شہباز شریف نے کیس ملتوی کرنے کی استدعا کرتے ہوئے بتایا کہ میرے وکیل امجد پرویز موجود نہیں ہیں۔ جج ملک ساجد علی اعوان نے ریمارکس دئیے کہ کیس مسلسل التوا میں جارہا ہے، جب سے میں آیا ہوں کیس کی سماعت نہیں ہوئی۔ محمد نواز چوہدری ایڈووکیٹ نے موقف اپنایا کہ پہلے نیب آرڈیننس ترمیم کے باعث کیس کی سماعت نہ ہوسکی تھی۔ عدالت نے مہلت کی استدعا منظور کرتے ہوئے شہباز شریف اور حمزہ شہباز سمیت گواہوں کو تیرہ دسمبر کو دوبارہ طلب کرلیا۔

آشیانہ اقبال کیس میں شہباز شریف کے شریک ملزم امتیاز حیدر نے بریت کی درخواست دائر کردی۔ عدالت نے شریک ملزمان کی بریت کی درخواستوں پر نیب سے چھ دسمبر کو جواب طلب کرلیا۔ منی لانڈرنگ کیس میں نیب تفتیشی افسر حامد جاوید نے ٹی ٹی سکینڈل کے ملزم فضل داد عباسی کے انتقال کی رپورٹ جمع کروا دی۔ جج نسیم احمد وِرک نے شہباز شریف، حمزہ شہباز سمیت تمام ملزموں اور گواہوں کو تیرہ دسمبر کو پیش ہونے کا حکم دیا ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More