منی لانڈرنگ ریفرنس:گواہوں کے بیانات پر جرح مکمل

احتساب عدالت لاہور میں منی لانڈرنگ ریفرنس میں شہبازشریف خاندان کے خلاف نیب کے دو گواہوں کے بیانات پر جرح مکمل کرلی گئی،نیب گواہ نے اعتراف کیا کہ جو ریکارڈ فراہم کیا اس میں نصرت شہباز کا کہیں ذکر نہیں۔

احتساب عدالت کے جج نسیم احمد ورک نے ریفرنس پر سماعت کی،کرونا کے باعث شہبازشریف عدالت پیش نہیں ہوئے جبکہ حمزہ شہباز نے پیش ہو کر حاضری مکمل کرائی،دوران سماعت عدالت نے نیب کے گواہ سی ایم ہاؤس کے سیکشن افسر چوہدری شاہد کے بیان پر جرح کی اور بتایا کہ شہبازشریف کے شریک ملزمان کی تنخواہوں کا ریکارڈ نیب کو فراہم نہیں کیا۔

دوران سماعت نیب کی ایک اور گواہ ایس ای سی پی کی افسر سدرہ منصور نے بیان ریکارڈ کرایا کہ انہوں نے العربیہ شوگر ملز سمیت دیگر کمپنیوں کا ریکارڈ فراہم کیا ہے،عدالتی کارروائی کے بعد میڈیا سے گفتگو میں حمزہ شہباز نے شیخ رشید کی باتوں پر کان نہ دھرنے کا مشورہ دے دیا۔

عدالت نے آئندہ سماعت پر مزید گواہان کو طلب کرتے ہوئے سماعت گیارہ فروری تک ملتوی کردی۔ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کی پیشی کے موقع پر سکیورٹی کے کڑے انتظامات کیے گئے تھے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More