لانڈرنگ کیس:شہباز اورحمزہ شہباز کی حاضری معافی کی درخواستیں منظور

لاہور کی احتساب عدالت نے منی لانڈرنگ کیس میں شہبازشریف اور حمزہ شہباز کی حاضری معافی کی درخواستیں منظور کر لیں۔عدالت نے شہباز شریف، حمزہ شہباز سمیت تمام ملزموں کو چھبیس جولائل کو دوبارہ طلب کرلیا۔عدالت نے شہباز شریف خاندان اور نواز شریف کے اثاثے منجمد کرنے کے خلاف دائر اعتراضات پر بھی وکلا سے دلائل کیلئے طلب کرلئے۔

احتساب عدالت میں منی لانڈرنگ کیس کی سماعت شروع ہوئی تو وزیراعظم شہبازشریف اور وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز پیش نہ ہوئے۔ امجد پرویز ایڈووکیٹ نے حاضری معافی کی درخواستیں دائر کرتے ہوئے بتایا کہ وزیراعظم شہبازشریف اسلام آباد میں اہم ملکی اجلاس اور میٹنگز میں مصروف ہیں جبکہ حمزہ شہباز بھی اہم ترین اجلاس اور وزیراعلیٰ پنجاب کے لئے ووٹنگ کے سلسلے میں مصروف ہیں۔ لہذا عدالت ملزموں کی ایک روزہ حاضری معافی کی درخواست منظور کرے۔احتساب عدالت کے جج قمرالزمان نے منی لانڈرنگ کیس کی سماعت چھبیس جون تک ملتوی کرتے ہوئے شہبازشریف اور حمزہ شہباز کی ایک روز کی حاضری معافی کی درخواستیں منظور کرلیں۔

عدالت نے شہبازشریف،حمزہ شہباز کی مستقل حاضری معافی کی درخواستوں پر وکلا کو دلائل کیلئے طلب کرلیا۔دوسری جانب عدالت نے شہباز شریف خاندان کے اثاثے منجمد کرنے کے خلاف دائر اعتراضات پر وکلا کو دلائل کیلئے چھبیس جولائل کو دوبارہ طلب کرلیا۔احتساب عدالت کے جج اسد علی نے غیرقانونی پلاٹس الاٹمنٹ کیس میں نوازشریف کی جائیداد نیلامی کے خلاف حکم امتناعی کی درخواست پر درخواستگزاروں کے وکلا کو مزید دلائل کیلئے پندرہ اگست کو دوبارہ طلب کرلیا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More