سندھ میں بلدیاتی قانون پاکستان کے آئین کے خلاف ہے، حلیم عادل شیخ

کراچی: اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے کہا ہے کہ بلدیاتی کالےقانون کوبارباراسمبلی میں ردکرچکے ہیں ،اس ایکٹ کیخلاف ایم کیوایم اورپی ٹی آئی سپریم کورٹ میں گئی،98سیکشن میں صوبائی حکومت نے ٹیکس لگانے نہ لگانے کا اختیار خود کے پاس رکھا ہے ۔

سندھ اسمبلی کمیٹی روم میں اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے پریس کانفرنس میں کہا کہ بلدیات کے قانون میں آرٹیکل 74 ہونے تک یہ کالا قانون رہے گا،سندھ میں بلدیاتی قانون پاکستان کےآئین کےخلاف ہے،ہم نےبلدیاتی کالےقانون کومستردکردیاہے۔

حلیم عادل شیخ کا کہناتھاکہ لوکل گورنمنٹ میں جتنی کرپشن ہوئی ہے کہیں نہیں ہوئی ہوگی سندھ لوکل گورنمنٹ ایکٹ ایک سو اٹھارہ کے تحت صوبائی حکومت کونسل کا فنڈ استعمال کر سکتی ہے۔

پی ٹی آئی رہنمانے کہاکہ اکیس شقیں 2013 ایکٹ کی عوام دشمن ہے جماعت اسلامی کے معاہدے میں ان 21 شقوں پر کوئی بات نہیں ہوئی ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More