اگر مجھے گرفتار کیا گیا تو کارکنان جانتے ہیں شہر میں کیا کرنا ہے، حافظ نعیم الرحمن

کراچی: سندھ اسمبلی کے باہر جماعت اسلامی کا دھرنا تیسرے روز بھی جاری ہے۔

امیرجماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے سندھ اسمبلی کے باہر دھرنے کے تیسرے روز میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ ایڈمنسٹریٹر کراچی دھرنے کا مقام تبدیل کرنے والے کون ہوتے ہیں ؟ ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضیٰ وہاب صرف شوپیس ہیں۔حکمران کراچی میں چلتے پھرتے ہیں تو اس شہر کو اختیار دلوادیں۔

امیر جماعت اسلامی کراچی کا کہنا تھا کہ مرتضیٰ وہاب اس شہر کے میرٹ پر نہیں سیاسی بنیاد پر ایڈمنسٹریٹر بنے ہیں۔ مرتضی وہاب ابھی تو آغاز ہوا ہے،آپ دھرنے کے تیسرے روز ہی گھبراگئے۔اگر سندھ اسمبلی سے زبردستی دھرنا ختم کیا گیا تو شہر میں جگہ جگہ دھرنے ہوں گے۔

حافظ نعیم نے کہا کہ حکمران مسئلہ حل کرنا چاہتے ہیں تو سنجیدہ مذاکرات کرنے یہاں آجائیں۔ زبردستی کی شکل میں ہمارے پاس پلان بی، سی سب کچھ ہے ۔اگر حافظ نعیم الرحمن کو گرفتار کیا گیا تو کارکنان جانتے ہیں کہ انہیں شہر میں کیا کرنا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More