گورنر پنجاب دھوکے باز تھے اس لیے برطرف کیا، فیاض چوہان

لاہور: رہنما تحریک انصاف فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو لکھا گیا خط اصلی تھا وگرنہ نیشنل سکیورٹی کونسل اعتراض کرتا۔گورنر پنجاب عمران خان کو دھوکہ دے رہے تھے اس لئے انہیں برطرف کیاگیا۔اگر ہم خدانخواستہ ناکام ہوتے ہیں تو تمام صوبائی و قومی اسمبلی مستعفی ہوں گے۔

پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے تحریک انصاف کے رہنما فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ جلد میر صادق اور میر جعفر جیسے لوگوں کا چہرہ سامنے آ جائے گا۔نیشنل سکیورٹی کونسل نے احتجاج کیا کہ پاکستان کو کسی ملک کی کالونی نہیں بننے دیں گے۔ ہم باوقار پاکستان کی جنگ لڑیں گے۔ نسلیں مانیں گی کہ باپ دادا نے علامہ اقبال اور قائد کے پاکستان کی جنگ لی تھی۔

فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ ترسیٹھ اے آرٹیکل کے مطابق کوئی کسی پارٹی کا منتخب ایم پی اے ایم این اے قطعا برخلاف ووٹ نہیں دے سکتا ۔چار ایشوز پر کوئی ممبر پارلیمنٹ پارٹی کے خلاف ووٹ نہیں دے سکتا ۔پی ٹی آئی، ق لیگ کے لوگوں نے آفر مسترد کیں انہیں سلام پیش کرتاہوں ۔

فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ گورنر پنجاب ڈ سپلین کے مطابق نہیں چلےاس لئے برطرف کئے گئے۔پیپلزپارٹی راہ حق، ن لیگ اور لوٹے کتنے ہیں سب کو معلوم ہے ۔ جولائی کے آخر میں اگست کے شروع میں الیکشن ہوں گے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More