مقبوضہ کشمیر میں ایک ہفتے میں دس کشمیریوں کو شہید کیا گیا،دفترخارجہ

اسلام آباد: ترجمان دفتر خارجہ عاصم افتخار نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں صورت حال ابتر ہوتی جا رہی ہے جہاں گزشتہ ایک ہفتے میں دس کشمیریوں کو شہید کیا گیا۔ کابل کیلئے پی آئی اے کی پروازیں معطل ہیں۔ افغانستان میں موجود پاکستانی سفیر اس معاملے پر افغان حکام سے بات کریں گے۔

صحافیوں کو ہفتہ وار بریفنگ دیتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ عاصم افتخار کا کہنا تھا کہ بھارت کی جانب سے نہتے کشمیریوں پر مظالم کا سلسلہ جاری ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں صورت حال انتہائی ابتر ہے گزشتہ ایک ہفتے کے دوران مزید دس کشمیریوں کو شہید جبکہ چودہ سو سے زائد کشمیریوں پر جعلی مقدمات قائم کیئے گئے ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق بھارتی اقدامات علاقائی سلامتی کیلئے خطرہ ہیں۔ پاکستان نے بھارت میں اسلاموفوبیا اور اقلیتوں پر مظالم کے حوالے سے دنیا کی توجہ مبذول کرائی ہے۔ عالمی انسانی حقوق کی تنظیمیں بھارتی مظام کی تصدیق کر چکی ہیں۔ بھارتی اقلیتوں پر مظالم کا عکس آسام میں رونما سفاک واقعات میں واضح ہے عالمی برادری بھارت کا احتساب کرے۔

عاصم افتخار نے بتایا کہ صدر عارف علوی نے دبئی ایکسپو میں پاکستان پویلین کے دورے سمیت اہم ملاقاتیں کیں۔ ترجمان نے کہا کہ امریکی ڈپٹی سیکرٹری آف سٹیٹ کے دورۂ پاکستان میں دونوں ملکوں نے باہمی تعلقات کو وسعت دینے پر اتفاق کیا۔ کابل میں پی آئی اے کا فلائٹ آپریشن معطل ہونے کے معاملہ پر بولے کہ اس پر پی آئی اے اپنا مؤقف دے چکا ہے ہمارے سفیر معاملے کو اعلی افغان حکام کے ساتھ اٹھائیں گے۔

عاصم افتخار نے کہا کہ طالبان کا اعلی سطحی وفد ترکی میں ہے مذاکرات کے ذریعہ ہی افغانستان کے مسائل حل ہو سکتے ہیں۔ عاصم افتخار نے کہا کہ ایرانی عسکری و سویلین حکام کی پاکستانی اعلی حکام سے ملاقاتوں میں افغانستان پر بھی بات چیت ہوئی ہے ہم سعودی عرب اور ایران کے درمیان مذاکرات کے حامی ہیں۔

ترجمان نے کہا کہ لائن آف کنٹرول پر اتار چڑھاؤ آتا رہتا ہے آجکل کشیدگی میں کمی آئی ہے۔ پاکستان ہمیشہ سے مطالبہ کرتا آیا ہے کہ اقوام متحدہ کے مبصر مشن کو مقبوضہ کشمیر دورے کی اجازت دی جائے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More