تازہ ترین
ہٹلر مودی کی کورونا کے خلاف حکمت عملی ناکام قرار

ہٹلر مودی کی کورونا کے خلاف حکمت عملی ناکام قرار

واشنگٹن:(10جون 2020)عالمی جریدے فنانشل ٹائمز نے ہٹلر مودی کی کورونا کے خلاف حکمت عملی کو ناکام قرار دیتے ہوئے کہا کہ بھارتی حکمرانوں کی بوکھلاہٹ سے کاروبار بند اور چودہ کروڑ افراد بے روزگار ہوگئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق غیرملکی جریدے فنانشل ٹائمز نے مودی سرکار کی بدترین ناکامی کا پردہ چاک کرتے ہوئے بتایا کہ ہندوستان کی کورونا وبا کے خلاف حکمت عملی بری طرح ناکام ہوچکی ہے،1.4ارب آبادی والے ملک میں کورونا کی 7 ہزار 500 اموات ہوچکی ہے،جس کے باعث بھارت خطے کا مہلک ملک بن گیا ہے۔

فنانشل ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق مودی نے پانچ کورونا کیسز پر چوبیس مارچ کو دنیا کا ظالمانہ لاک ڈاؤن کیا اور فتح کا نعرہ لگایا،مودی نے تباہ ہوتی معیشت پر مئی کے آخر میں لاک ڈاؤن ختم کیا، جس کے باعث انفیکشن بڑھا اور اسپتال بھرگئے،اس دوران بھارت میں لاک ڈاؤن بوکھلاہٹ سے کاروبار بند اور مزدور بے روزگار ہوگئے، لاکھوں افراد کچی آبادی، صنعتی علاقوں میں بنا معاش پھنسے رہے۔

فنانشل ٹائمز نے اپنی رپورٹ میں مزید کہا کہ بھارت میں لاک ڈاؤن سے سنگین معاشی بحران پیدا ہوا، 14 کروڑ افراد بے روزگار ہوئے،ہندوستان چالیس سال میں پہلی بار شدید کساد بازاری سے گزر رہا ہے،لاک ڈاؤن کے بعد ہندوستانی معیشت مخدوش جبکہ کورونا کیسز تیزی سے بڑھ رہے ہیں۔

عالمی جریدے نے اپنی رپورٹ میں مزید بتایا کہ ہندوستان میں یومیہ کورونا کیسز اوسطاً 9 ہزار 439 ہوچکے،جولائی کے آخر تک بھی ہندوستان میں کورونا کیسز عروج پر نہیں پہنچیں گے،مودی کا ہندوستان خطرناک حد تک وائرس کی طوالت برداشت کرنے کو تیار نہیں یہی وجہ ہے کہ ہندوستان میں لاک ڈاؤن حکمت عملی بری طرح ناکام ہو گئی ہے۔

فنانشل ٹائمز کے مطابق شہروں سے دیہی علاقوں کو جانے والے مزدور کورونا پھیلاؤ کا ذریعہ بنے،بھارت کا شعبہ صحت بغیر مالی وسائل کے شدید دباؤ میں ہے،ہندوستان اب محدود پابندیوں، ٹیسٹنگ، ڈیٹا تبادلہ، ماسک اور صفائی کا سوچ رہا ہے،ان اقدامات کے بغیر دنیا کے دوسرے گنجان آباد ملک میں صورتحال بھیانک ہونے جارہی ہے جبکہ ٹڈی دل کے غول ہندوستانی معیشت اور غذائی پیداوار کیلئے دوسرا بڑا خطرہ ہیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top