تازہ ترین
آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کوتبدیل کرنے کا فیصلہ، ذرائع

آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کوتبدیل کرنے کا فیصلہ، ذرائع

لاہور: (08 ستمبر 2020) آئی جی پنجاب شعیب دستگیر کو تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کی وزیراعظم عمران خان نے منظوری بھی دے دی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سی سی پی او لاہور کام جاری رکھیں گے۔

وفاقی حکومت نے انسپکٹر جنرل آف پولیس پنجاب شعیب دستگیر کو ان کے عہدے سے ہٹا نے کا حتمی فیصلہ کرلیا ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے آئی جی کی تبدیلی سے متعلق منظوری بھی دے دی ہے۔

اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے آئی جی پنجاب کی غیرموجودگی میں سی سی پی او لاہو ر اپبے فرائض انجام دیں گے تاہم ابھی اس کا نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا گیا۔

سی سی پی او کی تعیناتی کا معاملہ پر آئی جی پنجاب نے وزیراعلیٰ پنجاب سے ملاقات میں اپنے تحفظات سے آگاہ کیا تھا۔ عثمان بزدار نے تحفظات پر غور کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی۔ پنجاب پولیس اور لاہور پولیس کے سربراہان میں ڈیڈلاک برقرار ہے۔

ذرائع کے مطابق آئی جی پنجاب وزیر اعلیٰ سے ملاقات کے باوجود تیسرے روز بھی دفتر نہیں آئے۔ پنجاب اور لاہور پولیس کے کمانڈرز کی سرد جنگ سے ماتحت افسر تذبذب کا شکار ہیں۔ آئی جی پنجاب کا شکوہ ہے کہ کیپٹل سٹی کی پولیس کا نیا کمانڈر سربراہ پنجاب پولیس کی رضامندی سے تعینات نہیں کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق آئی جی پنجاب نے سینئر سیاسی قیادت سے اصرار کیا ہے کہ سی سی پی او لاہور عمر شیخ رہیں گے یا وہ اپنے عہدے پر رہیں گے۔ عمر شیخ کی تعیناتی پر آئی جی پنجاب وزیراعظم سے بھی مل چکے ہیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top