آئی ایم ایف اور فیٹف کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے، فضل الرحمان

اسلام آباد: امیر جمعیت علما اسلام ف مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف اور فیٹف کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔

سیمینارسے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاناما کا مسئلہ سیاسی عدم استحکام کے لیے آیا تھا، 27 جولائی کوہم نے تمام جماعتوں میں اتفاق رائے پیدا کیا، 2018ء کے الیکشن میں بڑے پیمانے پر دھاندلی ہوئی تھی، اتحاد میں تھوڑی بہت تھوڑ پھوڑ آتی رہی، ہم سب ایک پلیٹ فارم پراکٹھے ہوئے تاکہ ملک کو بچایا جاسکے، اب سمجھ آگیا ہوگا تمام سیاسی قوتوں کوایک جگہ اکٹھا ہونا کیوں ضروری تھا، ایسی قیادت کومسلط کیا گیا جس نے سی پیک کوروکا، سی پیک جیسے عظیم منصوبے کو ناکام بنانا پاکستان کومعاشی لحاظ سے کمزوربنانا تھا۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ انہوں نے سی پیک کے پورے منصوبے کوتباہ وبرباد کردیا ہے، اگرگزشتہ حکومت مزید قائم رہ جاتی توآج شائد ہم دعا خیرکہہ رہے ہوتے۔ گزشتہ حکومت ناجائزاوردھاندلی سے آئی تھی۔ ہم ملک کے خلاف کوئی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے، آئی ایم ایف اور فیٹف کا بھی ڈٹ کر مقابلہ کریں گے، گوادر منصوبے کوتباہ و برباد کر دیا گیا، امریکا نے بھی دھمکی آمیز خط کے بیا نیے کو یکسر مسترد کر دیا، سی پیک کوناکام بناناپاکستان کومعاشی لحاظ سےکمزوربنانا تھا، بیرونی ایجنڈے کے تحت سی پیک منصوبے کو پس پشت ڈالا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ جس دلدل میں قوم دھنس گئی تھی نکالنےمیں وقت لگےگا، فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ کیوں نہیں ہورہا؟ ہم ملکی مفادپرسمجھوتہ نہیں کریں گے، عمران خان پہلے سازش والا خط لہراتا رہا،پھرکہا قتل کی سازش ہورہی ہے،تمہیں کس نےمارناہے، سکیورٹی اداروں نےبھی کہہ دیا جھوٹ بول رہا ہے، آپ نے معاشی عدم استحکام عمران خان کی حکومت میں دیکھ لیا، امن اورمعیشت ایک دوسرے سے وابستہ ہیں، امن کے بغیرمعاشی ترقی نہیں ہوسکتی، عمران خان کوپیغام دینا چاہتا ہوں، عالمی نہیں،فضل الرحمان کی سازش نےتم کوگرایا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More