کشمور میں کھا د کی عدم فراہمی پر کاشتکاروں کا اسسٹنٹ کمشنر آفس پر دھرنا

کشمور : مقامی کاشتکاروں کی جانب سے کھاد نہ ملنے کیخلاف اسسٹنٹ کمشنر آفس کے باہر دھرنا دیا۔ کاشتکاروں کا کہنا تھا کہ جب تک کھاد نہیں ملے گی تب تک احتجاج جاری رہے گا ۔

کشمور میں کھاد کی عدم فراہمی پر کسانوں کی جانب سے اسسٹنٹ کمشنر آفس کے سامنے دھرنا دیا گیا جس میں مقامی کاشتکاروں کی بڑی تعداد میں شرکت کی ۔اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ جان بوجھ کر کسانوں پر ظلم کیا جارہا ہے۔ کھاد نایاب کر دی گئی ہے جس کی وجہ سے ہمیں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ کھاد سرکاری ریٹ کے بجائے 3000 ہزار روپے میں فروخت کی جارہی ہے ۔

کسانوں کا کہنا تھا کہ انتظامیہ اور ڈیلروں کی ملی بھگت سے کھاد مہنگے داموں فروخت کی جارہی ہے جبکہ انتظامیہ خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ۔ کاشت کاروں نے کہا کہ اگر ایک ہفتے میں کھاد کی فراہمی یقینی نہیں بنائی گئی تو گندم اور دیگر فصلیں شدید متاثر ہونے کا بھی خدشہ ہے ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More