اسٹیبلشمنٹ نے عدم اعتماد، استعفیٰ یا الیکشن کی آفر دی، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ نے تحریک عدم اعتماد، استعفیٰ یا الیکشن کی آفر دی لیکن میں نے کہا کہ الیکشن سب سے بہتر طریقہ ہے۔ استعفیٰ کا میں کبھی سوچ بھی نہیں سکتا ہوں۔

وزیراعظم عمران خان نے نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ مجھےاگست سے اندازہ ہوگیا تھا کہ یہ گیم چل رہا ہے۔لندن سے منصوبہ بندی ہورہی تھی۔ایجنسیز کی رپورٹ تھی کہ نواز شریف اور اس کی بیٹی نے کھل کر فوج کو برا بھلا کہا ۔ ججوں کو خریدنا اور پلاٹ دینا یہ سب اس نے شروع کیا۔ان کی کوشش ہے اقتدار میں آئیں اور نیب کو ختم کریں۔

عمران خان نے کہا کہ جنرل مشرف نے اپنی حکومت بچانے کے لیے این آر او دیا۔مجھے حکومت بچانا ہوتی تو پہلے دن این آر او دے دیتا۔مشرف نے ان ڈاکوؤں کو معاف کرکے سب سے بڑا ظلم کیا۔ حکومت چلی جائے، جان چلی جائے، کبھی این آر او نہیں دوں گا۔

وزیراعظم کا کہنا تھاکہ سب کے سامنے کہہ رہا ہوں ۔ میری جان کو خطرہ ہے۔یہ جو سارے ملے ہوئے ہیں ان کویہ پتا ہےکہ عمران خان چپ کرکے نہیں بیٹھے گا۔ان کا خیال ہےکہ پیسے دے کر لوگوں کے ضمیر کو خرید کر حکومت گرادینی ہے اور میں چپ کرکے تماشا دیکھوں گا۔ترقی پذیرملکوں کو میر جعفر اور میر صادق کے ذریعےکنٹرول کیا گیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More